لیڈی پولیس اہلکار کی ڈاکٹر، عملے سے  تلخ کلامی،لیب اسسٹنٹ پر تشدد 

   لیڈی پولیس اہلکار کی ڈاکٹر، عملے سے  تلخ کلامی،لیب اسسٹنٹ پر تشدد 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 مظفرگڑھ(نیوز رپورٹر،سٹی رپورٹر)دیہی مرکز صحت قصبہ گجرات میں (بقیہ نمبر49صفحہ6پر)
ڈیوٹی پر موجود لیڈی کانسٹیبل کو ڈیوٹی لیڈی ڈاکٹر کی  طرف سے اپنی ڈیوٹی صحیح انجام دینے  کے پیغام پر سیخ پا ہوگئی اور ڈیوٹی لیڈی ڈاکٹر عملہ سے بدتمیزی کی،  فون کال کے ذریعے اپنے بھائیوں کو بلوا کر فوکل پرسن کرونا ویکسینیشن سنٹر  محمد عاصم غوری لیب اسسٹنٹ  پر بہیمانہ تشدد اور سرکاری ریکارڈ بھی پھاڑ دیا، عاصم غوری کی درخواست پر کاظم اعوان اور ایک نامعلوم شخص کے خلاف مقدمہ درج کرلیاگیا۔ تفصیل کے مطابق قصبہ بصیرہ کے رہائشی محمد عاصم غوری جو کہ دیہی مرکز صحت قصبہ گجرات میں لیب اسسٹنٹ ہیں  کرونا ویکسینیشن سنڑ گجرات میں بطور فوکل پرسن اپنی ڈیوٹی سرانجام دے رہے ہیں۔ گزشتہ روز ہسپتال میں ڈیوٹی پر مامور لیڈی کانسٹیبل کو ہسپتال کی لیڈی ڈاکڑ کے کہنے پر عاصم غوری نے کہا کہ اگر اپنی ڈیوٹی اچھے طریقے سے سرانجام نہیں دے سکتی تو واپس پولیس اسٹیشن چلی جا جس پر لیڈی کانسٹیبل آپے سے باہر ہوگئی اور اپنے بھائیوں کو فون کال کرکے بلوایا۔ انہوں نے ہسپتال میں آتے ہی فوکل پرسن کرونا سنڑ عاصم غوری پر بیہمانہ تشدد کرنا شروع کردیا اور کار سرکار میں مداخلت کرتے ہوئے سرکاری ریکارڈ بھی پھاڑ دیا۔ عاصم غوری کی درخواست پر پولیس تھانہ محمودکوٹ نے لیڈی کانسٹیل کے بھائیوں کاظم اعوان اور ایک نامعلوم شخص کے خلاف مقدمہ درج کرلیا۔ جبکہ پولیس تھانہ محمود کوٹ کی جانب سے لیڈی کانسٹیبل کو تحفط فراہم کرنے کا پی ایم اے مظفرگڑھ نے الزام عائد کیا ھے ۔ پی ایم اے مظفرگڑھ کے ڈاکڑ مقبول عالم کا کہنا ھے کہ پی ایم اے مظفرگڑھ اور الائیڈ ہیلتھ پروفیشنلز مظفرگڑھ پولیس کی اس زیادتی کے خلاف ہر فورم پر احتجاج کا  حق رکھتی ہے اور  ڈی پی او مظفرگڑھ سے اپیل کرتی ہے کہ اس  معاملہ کی تحقیقات میرٹ پر از خود کر کے ایک غریب پیرا میڈکس کو انصاف فراہم کریں۔
تشدد