دھاندلی کر کے انتخابی نتائج کو تبدیل کرنے کی ساز ش کی جا رہی ہے: سعید غنی

  دھاندلی کر کے انتخابی نتائج کو تبدیل کرنے کی ساز ش کی جا رہی ہے: سعید غنی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 کراچی(اسٹاف رپورٹر)وزیر اطلاعات و محنت سندھ و صدر پیپلز پارٹی کراچی ڈویژن سعید غنی نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی اس وقت بھی کراچی کے مختلف علاقوں بالخصوص کلفٹن کنٹونمنٹ بورڈ میں انتخابی نتائج کو تبدیل کرنے کی کوششوں میں مصروف ہے۔گزشتہ روز اسد عمر، علی زیدی سمیت دیگر وفاقی وزراء کی جانب سے پریس کانفرنس بھی کنٹونمنٹ انتخابات پر اثر انداز ہونے کی کوشش تھی، جس کا جلد جواب دوں گا۔ وہ علاقے جس پر یہ تاثر تھا کہ وہ پی ٹی آئی کے ووٹرز کے علاقے ہیں اور اب وہ نہیں رہے ہیں ان میں دھاندلی کرکے انتخابی نتائج کو تبدیل کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔الیکشن کمیشن سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ کلفٹن کنٹونمنٹ بورڈ کے وارڈ 5، 6، اور 7 کے ساتھ ساتھ سندھ بھر میں کنٹونمنٹ کے انتخابی عمل اور بعد ازاں گنتی کے عمل میں کسی بھی ادارے کی مداخلت نہ ہو اس کو یقینی بنائے۔ اتوار کو جاری اپنے ویڈیو بیان میں سعید غنی نے کہا کہ ہمارے پاس اس بات کی مصدقہ اطلاعات ہیں کہ کلفٹن کے وارڈ 5، 6 اور 7 میں پی ٹی آئی والے الیکشن کمیشن کے عملہ کے ساتھ مل کر نتائج کو تبدیل کرنے کی سازشوں میں مصروف ہیں، انہوں نے کہا کہ وہ علاقے جس پر یہ تاثر تھا کہ وہ پی ٹی آئی کے ووٹرز کے علاقے ہیں اور اب وہ نہیں رہے ہیں ان میں دھاندلی کرکے انتخابی نتائج کو تبدیل کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ کلفٹن کنٹونمنٹ بورڈ کے وارڈ 5، 6، اور 7 کے ساتھ ساتھ سندھ بھر میں کنٹونمنٹ کے انتخابی عمل اور بعد ازاں گنتی کے عمل میں کسی بھی ادارے کی مداخلت نہ ہو اس کو یقینی بنائے اور اگرووٹنگ کے عمل اور بعد ازاں گنتی کے عمل میں اگر کسی قسم کی مداخلت نظر آئی تو ہمارے پاس کوئی چارہ نہیں ہے کہ نہ صرف ہم ان اداروں کو بے نقاب کریں بلکہ احتجاج بھی کریں۔ سعید غنی نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ انتخابات صاف و شفاف ہوں اور ایسا نہ ہو کہ جو امیدوار کامیاب ہو اس کو ناکام اور ناکام کو کامیاب قرار دیا جائے اور اگر ایسا ہوا تو ہم نہ تو ان نتائج کو تسلیم کریں گے بلکہ اس پر شدید احتجاج بھی کریں گے۔ سعید غنی نے اپنے ویڈیو بیان میں واضح کیا ہے کہ کنٹونمنٹ کے انتخابی عمل اور بعد ازاں گنتی کے عمل میں کسی قسم کی اداروں کی مداخلت کو پیپلز پارٹی کے کارکنان برداشت نہیں کریں گے۔

مزید :

صفحہ اول -