خاتون کے گھر میں 6 ماہ تک کچن اور فریج سے کھانا چوری ہوتا رہا؟ پھر ایک دن ایسا کام ہوگیا کہ جسم میں خوف کی لہر دوڑ جائے

خاتون کے گھر میں 6 ماہ تک کچن اور فریج سے کھانا چوری ہوتا رہا؟ پھر ایک دن ایسا ...
خاتون کے گھر میں 6 ماہ تک کچن اور فریج سے کھانا چوری ہوتا رہا؟ پھر ایک دن ایسا کام ہوگیا کہ جسم میں خوف کی لہر دوڑ جائے
سورس: Pixabay

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) کوئی اجنبی شخص 6ماہ تک آپ کے گھر میں رہتا رہے اور آپ کو علم نہ ہو، یہ کیسے ممکن ہے؟ ایک امریکی خاتون نے اس حوالے سے اپنے ماضی کا ایک ایسا واقعہ سنایا ہے کہ سن کر آدمی خوفزدہ رہ جائے۔ دی سن کے مطابق اس خاتون نے بتایا ہے کہ اس وقت اس کی عمر 20سال تھی۔ اس نے اپنی فیملی کے قریب رہنے کے لیے ایک چھوٹے سے قصبے میں اپارٹمنٹ کرائے پر لیا تھا اور وہاں رہنے لگی تھی۔ اس اپارٹمنٹ میں منتقل ہونے کے بعد سے اس کی اشیاء اکثر ادھر ادھر ہوتی رہتی تھیں۔خاتون بتاتی ہے کہ کچن اور فریج سے اس کی کھانے پینے کی اشیاء مسلسل چوری ہو رہی تھیں اور باقی سامان بھی استعمال ہوتا تھا لیکن وہ یہ سوچ کر خاموش رہی کہ اس کے بھائی کے پاس اپارٹمنٹ کی ایک چابی ہے اور ہو سکتا ہے کہ وہ یہ اشیاء استعمال کر رہا ہو۔ 6ماہ بعد یہ ہوا کہ اس کے گھر میں پانی بھر گیا۔ اس سے چند دن قبل ہی وہ ایک کتے کا بچہ لے کر آئی تھی جو ابھی بمشکل چلتا تھا۔ اس کی غیرموجودگی میں جب گھر میں پانی بھرا تو کسی نے اس کتے کے بچے کو اٹھا کر اونچی جگہ پر رکھ دیا۔ 
خاتون لکھتی ہے کہ ”یہ وہ واقعہ تھا جس پر مجھے یقین ہو گیا کہ گھر میں کوئی اور رہ رہا ہے کیونکہ اس روز میں جانتی تھی کہ میرا بھائی  شہر گیا ہوا تھا۔ اگر اس روز کتے کے بچے کو وہ اوپر نہ رکھتا تو وہ شاید ڈوب کر مر جاتا۔اس واقعے پر میں نے پولیس کو رپورٹ کی اور پولیس نے آ کر میرے تمام گھر کی تلاشی لی تو اپارٹمنٹ کے بالائی کمرے میں سے ایک ’سلیپنگ بیگ‘، ایک کتاب اور استعمال کی کچھ دیگر اشیاء برآمد ہو گئیں۔ یہ بالائی کمرہ غیرآباد تھا اور میں نے اسے کبھی کھولا بھی نہیں تھاکیونکہ اسے کوئی راستہ نہیں جاتا تھا اور نیچے کوئی بلند سٹول وغیرہ رکھ کر بمشکل اس میں چڑھنا پڑتا تھا۔ پولیس نے اس کے بعد اس آدمی کو تلاش کرنے کی بہت کوشش کی لیکن اس کا کوئی سراغ نہ مل سکا۔ ہمارا قصبہ زیادہ بڑا نہیں تھا اور نہ ہی یہاں بے گھر لوگ پائے جاتے تھے، چنانچہ وہ کون شخص تھا جو میرے اپارٹمنٹ میں رہتا رہا؟ آج بھی اس سوال کا جواب کوئی نہیں جانتا اور جب بھی مجھے یہ واقعہ یاد آتا ہے، میرے بدن میں خوف کی ایک لہر دوڑ جاتی ہے۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -