علامہ اسلم صدیقی نے درس ہدایت کی نشست میں ”سورہ الاعراف“ کا خلاصہ بیان کیا

علامہ اسلم صدیقی نے درس ہدایت کی نشست میں ”سورہ الاعراف“ کا خلاصہ بیان کیا

  

لاہور (پ ر) ممتاز مذہبی سکالر مفسر قرآن پروفیسر ڈاکٹر علامہ محمد اسلم صدیقی نے درس ہدایت کی نشست میں ”سورہ¿ الاعراف“ کا خلاصہ بیان کرتے ہوئے کہا ہے کہ قرآن کریم مومنو کے لئے نصیحت ہے اگر تمام جن اور انسان اکٹھے ہو جائیں تو قرآن پاک جیسی کتاب نہیں لاسکتے فرمایا: کہ تم اس جیسی ایک سورت لا کر دیکھاﺅ۔ شخصیت اور کلام میں فرق ہوتا ہے۔ آپ میں اکثر قرآن پڑھتے تو کعبہ کے پردوں میں چھپ کر مشرکین سنتے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اللہ کے کلام میںکمی بیشی نہیں ہو سکتی فرمایا: کہ اس کلام کی وجہ سے تیرے دل میں کوئی حرج نہیں ہونا چاہئے،ہمیں قرآن کریم پڑھنا اور اس پرعمل کرنا چاہئے آپ اللہ کے آخری رسول بن کر تشریف لائے، آپ کے خلاف مکہ میں سازشیں ہوتی رہیں حتیٰ کہ مشرکین نے آپ کے قتل کا منصوبہ بنایا جس کی وجہ سے آپ مکے سے تالیف تشریف لے گئے مشرکین نے تین میل کے راستے تک آپ پر ظلموں کی انتہا کر دی آپ پر پتھر برسائے گئے، جنات نے نخلا میں آپ کو قرآن پڑھتے سنا جبکہ ایک سردار نے مکے میں آپ کو پناہ دی۔ آپ کا کام ہدایت دینا تھا آپ لوگوں کو حق راہ کی نصیحت فرماتے رہے کہ اے لوگو! قرآن پر عمل کرو اللہ پر ایمان لاﺅ اور شرک سے بچو۔

 اللہ تو غاصبوں کو جاننے والا ہے، اُس دن وزن حق ہو گا، اعمال کا وزن کیا جائے گا، وزن میں کوئی غلطی نہیں ہو گی جس کا پلڑا جھلک جائے گا وہ کامیاب ہو جائے گا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -