وزیرستان میں دوگروپوں کی لڑائی سے کوئی تعلق نہیں،ترجمان تحریک طالبان

وزیرستان میں دوگروپوں کی لڑائی سے کوئی تعلق نہیں،ترجمان تحریک طالبان

  

پشاور(آئی این پی)ترجمان کالعدم تحریک طالبان شاہد اللہ شاہد نے کہا ہے کہ وزیرستان میں دوگروہوں میں جاری لڑائی سے تحریک طالبان کا کوئی تعلق نہیں، جن میں لڑائی جاری ہے ان میں صلح کروائی جارہی ہے،ملا فضل اللہ کے حکم سے مرکزی شورٰی جو معاملات طے کرتی ہے طالبان کے تمام حلقے اس کے پابندہیں، تحریک طالبان تمام پروپیگنڈوں کو مسترد کرتی ہے ہم شریعت اسلامی کی بالا دستی پریقین رکھتے ہیں۔اتوار کو تحریک طالبان کے مرکزی ترجمان شاہد اللہ شاہد نے نامعلوم مقام سے فون پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میڈیا پر چلنے والے بعض عناصر تحریک طالبان کے درمیان معمولی تلخی کو بنیاد بنا کر پر وپیگنڈہ مہم میں مصروف ہیں ہم اس وقت کو واضح کرنا ضروری سمجھتے ہیں کہ وزیرستان میں جاری دو گروپوں کے درمیان لڑائی سے پوری تحریک کا کوئی تعلق نہیں ہے صرف اس علاقے میں کچھ ساتھیوں کے درمیان بعض غلط فہمی کی وجہ سے تلخی پیدا ہوئی تھی جس کو تحریک طالبان کے مرکزی شورٰی نے فور طور پر مداخلت کر کے حل کر دیا ، حکومت کے ساتھ مذاکرات اور جنگ بندی کا اس معاملے سے کوئی تعلق نہیں ہے ،انہوں نے کہا کہ مولانا فضل اللہ کے حکم سے مرکزی شوری جو معاملات طے کرتی ہے طالبان کے تمام حلقے اس کی پابند ی کرتے ہیں، تحریک طالبان تمام پروپیگنڈوں کو مسترد کرتی ہے ہم شریعت اسلامی کی بالا دستی پریقین رکھتے ہیں۔

مزید :

صفحہ اول -