مذاکرات کے حوالے سے حکومت اور فوج کا ایک پیج پر ہونا ضروری ہے ،سراج الحق

مذاکرات کے حوالے سے حکومت اور فوج کا ایک پیج پر ہونا ضروری ہے ،سراج الحق

  

 پشاور( خبر نگار خصوصی)جماعت اسلامی پاکستان کے مرکزی امیر سراج الحق نے کہا ہے کہ ملک میں پائیدار امن کے قیام اور بدامنی کے خاتمے کے لئے مذاکرات کے علاوہ اور کوئی آپشن سرے سے موجود ہی نہیں۔ حکومت طالبان مذاکرات کے حوالے سے حکومت اور فوج کا ایک صفحے pageپر ہونا ضروری ہے۔ حکومت طالبان مذاکرات کی کامیابی کے لئے جماعت اسلامی اپنا کردار ادا کر رہی ہے۔ جو عناصر مذاکرات کی راہ میں روڑے اٹکاتے ہےں وہ پاکستان کے دوست نہیں ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے المرکز اسلامی پشاور میں جماعة الدعوة کے امیر حافظ محمد سعید کی سراج الحق کو جما عت اسلامی کا امیر منتخب ہونے پر مبارکباد کے لئے آنے کے موقع پر ان کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے کیا۔ اس موقع پر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا کے سےکرٹری اطلاعات اسرار اللہ اےڈوکیٹ، صوبائی ڈپٹی سےکرٹری جنرل مولانا ہدایت اللہ،سابق صوبائی وزےر کاشف اعظم چشتی ، جماعت اسلامی ضلع پشاور کے جنرل سیکرٹری حمد اللہ جان بڈھنی بھی موجود تھے۔ امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے مزید کہا کہ جہاں پاکستان کی سا لمیت کی بات آتی ہے وہاں دیگر اُمور ثانوی حیثیت اختیار کر لےتے ہےں۔ انہوں نے کہا کہ اسلام اور پاکستان کے لئے تمام محب وطن اور اسلامی قوتوں کو ملکر کر چلنا چاہےے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا آج اور کل اس ملک سے وابستہ ہے ۔ وطن عزیز کی خاطر قربانی دےنا عظیم کار ثواب ہے۔ حکومت طالبان مذاکرات کی راہ میں درپیش رکاوٹوں کے حوالے سے اےک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ انہیں یقین ہے کہ مذاکرات کامیاب ہونگے ۔ صرف اےک ماہ کی مدت میں اتنے گنجلک اور پیچیدہ مسئلے حل نہیں ہوتے ۔ اےسے معاملات کے حل میں وقت لگتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جو لوگ حکومت طالبان مذاکرات کی راہ میں روڑے اٹکا رہے ہےں وہ پاکستان اور فوج کو مشکل سے دو چار کرنا چاہتے ہےں۔ ہماری خواہش ہے کہ ملک اور فوج دونوں مشکلات سے دوچار نہ ہوں۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت نے ملک میں امن کے قیام کے لئے مذاکرات کی راہ اپنائی ہے۔ اس کا جماعت اسلامی بھر پور ساتھ دے رہی ہے اور مستقبل میں بھی امن کےلئے جماعت اسلامی ہر قسم کے تعاون کےلئے تےار ہے ۔ جماعة الدعوة کے امیر حافظ محمد سعید نے سراج الحق کو امیر جماعت اسلامی منتخب ہونے پر نےک تمناﺅں کا اظہار کرتے ہوئے دعا کی کہ اللہ تعالی انہیں یہ بوجھ اُٹھانے کی توفیق عطاءفرمائے۔ قبل ازیں المرکز اسلامی میں اسلامی جمعیت طلبہ خیبر پختونخوا کے ناظمین کیمپ کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے جماعت اسلامی پاکستان کے مرکزی امیر سراج الحق نے کہا کہ اسلامی جمعیت طلبہ نے نوجوانوں کو نظریاتی بنیادوں پر منظم کرنے میں اہم کردار ادا کیا ہے ۔ اسلامی جمعیت طلبہ ملک کے روشن مستقبل کی اُمید ہے ۔انہوں نے طالب علموں پر زور دیا کہ وہ اپنی تعلیم کی طرف بھر پور توجہ دیں اور بالخصوص سائنس اور ٹیکنالوجی کی میدان میں مہارت حاصل کرےں۔ انہوں نے کہا کہ نوجوان اُٹھےں اور ملک کو سرمایہ داروں اور جاگیرداروں کے چنگل سے نجات دلانے کے لئے اپنا کردار ادا کریں کیونکہ مٹھی بھر سرمایہ داروں اور جاگیرداروں نے ملک کے 95فیصد وسائل پر قبضہ کر رکھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے عام آدمی پر ٹےکسوں کا بوجھ ڈال دیا گےا ہے لیکن فائدے عام آدمی کی بجائے کوئی اور اُٹھاتے ہےں ۔ انہوں نے کہا کہ اگر اس ملک کے صاحب استطاعت لوگ صرف زکواة بھی صحیح طرےقے سے ادا کرناشروع کر دیں تو ملک سے غربت کا خاتمہ ہو سکتا ہے۔ ناظمین کیمپ سے خطاب کرتے ہوئے اسلامی جمعیت طلبہ پاکستان کے مرکزی ناظم اعلیٰ زبیر حفیظ نے کہا کہ رہبری و رہنمائی علم کے بغیر ناممکن ہے۔ علم کی بنیاد پر رہبری و رہنمائی اور قیادت بہتر طرےقے سے ادا کی جاسکتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ آج کل جتنی بھی ٹیکنالوجی ہے وہ صرف کفر کے لئے نہیں مسلمان نوجوانوں کو بھی اس سے استفادہ حاصل کرنا چاہےے۔ ناظمین کیمپ سے اسلامی جمعیت طلبہ خیبر پختونخوا کے ناظم صہیب الدین کا کا خیل نے بھی خطاب کیا۔ سراج الحق 

مزید :

صفحہ آخر -