بھارت علماء کرام کے فتوے کے بعد حاجیوں کو دی جانے والی سبسڈی ختم

بھارت علماء کرام کے فتوے کے بعد حاجیوں کو دی جانے والی سبسڈی ختم

  

 لاہور(میاں اشفاق انجم سے)بھارت نے علماء کرام کے فتوے کے بعد حاجیوں کو دی جانے والی سبسٹدی ختم کر دی ،حج 2014 ء پاکستانی حکومت نے پہلی دفعہ سرکاری سکیم کے حاجیوں کو کھانے کی مد میں 1000ریال فی حاجی سبسٹدی دینے کی تجویز رکھ دی،وزارت مذہبی امور نے انتہائی اقدام اٹھانے کا فیصلہ اس وقت کیا جب سعودی حکومت نے سرکاری اور پرائیویٹ حج سکیم کے 40روزہ اور شارٹ پریڈ کے حجاج کے لیے کھانا لازمی کرنے کے ساتھ ساتھ سعودیہ کی رجسٹرڈ کمپنیوں سے کھانا لازمی لینے کی شرط عائد کی ،وزارت مذہبی امور کی طرف سے سستا حج دینے کے وعدے کی تکمیل کی راہ میں پہلے PIAجو اس نے ایک لاکھ 20ہزار کرایہ طلب کیا،اس کے بعد لازمی کھانا مسئلہ بن گیا،گزشتہ سال سرکاری سکیم کے عازمین کے قربانی کے پیسے بھی گورنمنٹ نے وصول کیے تھے اس سال قربانی لازمی کی شرط ختم کر دی تاکہ حج سستا ہو سکے،حج2014ء میں سستا حج کی قلعی اس وقت کھل گئی جب دولاکھ72ہزارحج پیکج جاری کر کے اعلان کیا گیا حاجی کھانا اور قربانی کا خود انتظام کرے گااور 1500ریال زرمبادلہ بھی ساتھ لے جائے گااس سال جمع کرائے گئے حج پیکج کی رقم سے کوئی زر مبادلہ واپس بھی نہیں ہو گ،پاکستان میں عرصہ سے بھارت کی حکومت کی مثال دی جاتی رہی ہے کہ وہاں ہندو حکومت مسلمانوں کو حج کے موقع پر سبسٹڈی دیتی ہے۔

حج

مزید :

صفحہ آخر -