مخصوص استھالی طبقہ بلوچستان کو پسماندگی کے اندھروں سے نکلنے نہیں دے رہا لشکری رئیسانی

مخصوص استھالی طبقہ بلوچستان کو پسماندگی کے اندھروں سے نکلنے نہیں دے رہا ...

  

                                        کوئٹہ (آن لائن) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنماءسابق سینیٹر نوابزادہ حاجی میرلشکری رئیسانی نے بلوچستان کی مخدوش صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ موجودہ حالات کو دیکھتے ہوئے ایسا محسوس ہورہا ہے کہ آج کا صاحب اقتدار بے اختیار ہے مخصوص استحصالی طبقہ بلوچستان کو پسماندگی کے اندھیروں سے نکلنے نہیں دے رہا ان خیالات کا اظہار انہوں نے ”آن لائن“ سے خصوصی بات چیت کے دوران کیا انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ہمیشہ سے ایک مخصوص طبقہ پسماندہ اقوام کا استحصال کرتا رہا ہے اور اس کے مفادات کے باعث بلوچستان کے مسائل حل نہیں ہوسکے ہمیشہ سے بلوچستان کو درپیش مسائل کی وجہ نوابوں اور سرداروں کو قرار دینے والے اس طبقہ کے ایماءپر آج ان کی اپنی مرضی کی حکومت آئی ہے لہٰذا اب ہم یہ دیکھیں گے کہ موجودہ حکمران بلوچستان کے شکوے کہاں تک دور کرتے ہیں اور یہاں کے پسماندہ عوام کے سروں پر کون سے تاج رکھے جائیں گے انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی واضح پالیسی کے باعث ہی عوام نے ہم پر اعتماد کا اظہار کیا اور بلوچستان میں پارٹی کو واضح اکثریت میں کامیابی حاصل ہوئی ہمیں اس بات کا ادراک ہے کہ آمرنہ دور کی تلخیوں کے بعد عوام نہ صرف جمہور کی بالادستی کے قائل ہیں بلکہ وہ چاہتے ہیں کہ ان کے ووٹوں سے منتخب ہونے والے ایوانوں میں جاکر ان کے مسائل کے حل کیلئے آواز بلند کریں اور ایسی صورتحال میں تمام سیاسی و جمہوری قوتوں کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ نہ صرف عوامی مینڈیٹ کا احترام کریں بلکہ عوام کی امیدوں پر پورا اترنے کی ہرممکن کوشش کریں انہوں نے کہا کہ ہمیشہ سے بلوچستان کی پسماندگی پر سیاست کی گئی ہے توتک میں اجتماعی قبروں کی دریافت ¾ قلات ¾ ڈیرہ بگٹی میں جاری آپریشن ماورائے آئین و قانون لوگوں کو لاپتہ کرنے کا نہ ختم ہونے والا سلسلہ اس بات کی غمازی کرتا ہے کہ حکمران آج بھی بے اختیار ہیں اور طاقت کا اصل محور کوئی اور ہے ا، حالات اور واقعات اس بات کے متقاضی ہیں کہ بلوچستان کی سیاسی اور جمہوری سوچ رکھنے والی قوتیں بلو¾چستان کے وسیع تر مفاد کو مدنظررکھتے ہوئے یکجا ہوجائیں۔

لشکری رئیسانی

مزید :

علاقائی -