بے شرمی کے کام میں شرم کیسی, ہندوستانی اداکارائیں گفتگو میں بھی ’مزے ‘لینے لگیں

بے شرمی کے کام میں شرم کیسی, ہندوستانی اداکارائیں گفتگو میں بھی ’مزے ‘لینے ...

  

ممبئی ( مانیٹرنگ ڈیسک)بھارتی فلم انڈسٹری میں ہوشربا رقص کے بعد ہیجان انگیز جنسی مناظر عام ہونے کے بعد فلم انڈسٹری اور ہندوستانی میڈیا میں بھی ان مناظر پر’ کھلی ‘ گفتگو ہونے لگی ہے ۔بھارتی اداکارائیں کھلے عام تسلیم کرتی ہیں کہ ایسا جنسی عمل جو کسی دوسرے کی موجودگی میں سرعام ممکن نہیں اوروہ سکرین پر قابلِ اعتراض و فحش کہلاتاہے ، کی عکسبندی میں انہیں کوئی جھجک محسوس نہیں ہوتی بلکہ مزا آتا ہے اور وہ اس سے لطف اندوز ہوتی ہیں ۔بھارتی ہیروئن دیپکا پیڈکون نے تو یہ تک کہہ دیا ہے کہ وہ سابق بوائے فرینڈ رنبھیر کپور کے ساتھ رومان اور رومانس سے آگے جنسی تسکین کی انتہائی حالت کے سین فلمبندکرانے میں بڑی آسانی محسوس کرتی ہیں ۔ وہ کہتی ہیں کہ اگرچہ رنبھیر سے اب’ وہ‘ تعلق‘ نہیں لیکن پھر بھی ایکٹر کی حیثیت سے ایسے مناظرفلمبند کرانے میں کوئی دقت نہیں ہوتی ، اس وقت صرف ایکٹر اور ایکٹ سامنے ہوتا ہے ۔سونال چوہان کہتی ہیں کہ بکنی استعمال کرنے ، مرداداکار کے ساتھ بوسے اور جنسی مناظر کی فلمبندی کرانے میں ابتداءمیں کچھ جھجک محسوس ہوئی تھی ، میں نے اس کے بارے میں کئی باتیں بھی کی تھیں لیکن جب فلم کے ہدایتکار نے سین اور ڈیمانڈ کی وضاحت کی تو پھر کوئی جھجک اور رکاوٹ محسوس نہیں ہوئی اور میں نے یہ’ سب کچھ‘ اپنا لیا ۔ فلم شیشہ میں ہیجان انگیز مناظر سے دل لبھانے والی ہیروئن پونم پانڈے نے تو کھلی بات بالکل ہی کھلے کھلے الفاظ میں بیان کردی۔ ان کا کہنا ہے جسمانی نمائش اور جنسی تسکین کے ہیجان انگیز مناظر کی فلمبندی کے دوران انہیں کوئی جھجک ، رکاوٹ یا دشواری محسوس نہیں ہوئی بلکہ میرا ساتھی اداکار زیادہ نروس ہوگیا تھا اور شرما رہا تھامگرمیں نے اس فلم کی پوری عکسبندی کے دوران بہت’ انجوائے‘ کیا ۔ وہ کہتی ہیں کی سین کی ڈیمانڈ کتنی ہی جنسی تسکین یانمائش ہیجان انگیزی پر مشتمل ہو، اسے مکمل کرنا اداکارہ کی حیثیت سے میری ذمہ داری ہے ۔میں ایسے مناظر فلمبند کرانا برا نہیں سمجھتی ۔یہی وجہ ہے کہ میں نے فلم شیشہ کی عکسبندی کے دوران بھر پور لطف اٹھایا۔

 

  •  

مزید :

تفریح -