حکومت نے موٹا کردیا

حکومت نے موٹا کردیا
حکومت نے موٹا کردیا

  

مانچسٹر (بیورو رپورٹ)33سالہ برطانوی خاتون ”سیٹی میک فالین“کا کہنا ہے کہ اس کے موٹاپے کی ذمہ دار برطانوی حکومت ہے۔ خاتون کاوزن قریباً 120کلو گرام ہے اور اس کا کہنا ہے کہ اسے ”سوشل سکیورٹی“کی مد میں ماہانہ 1800پاؤنڈ دیئے جاتے ہیں۔ جس میں سے کافی رقم بچ جاتی ہے تو وہ اسے باہر کھانے کھانے پر اڑا دیتی ہے۔ اس نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اس کو دی جانے والی رقم میں کمی کی جائے تاکہ اس کا کھانا کم ہو سکے۔سیٹی کے تین بچے ہیں جن میں سے ایک کی قوت سماعت بے حد کمزور ہے جس وجہ سے حکومت کی جانب سے اس قدر بھاری ماہانہ وظیفہ دیا جا تا ہے۔ اس حوالے سے مقامی ممبر پارلیمنٹ کا کہنا تھا کہ خاتون کا مؤقف مضحکہ خیز ہے وہ حکومت کا شکریہ ادا کرنے کی بجائے شکایت کرکے ناشکری کر رہی ہے۔ اب اس صورتحال میں کیا کہا جا سکتا ہے۔ آدھی سے زیادہ دنیا بھوک سے پریشان ہے اور ان کی مدد کرنے والا کوئی نہیں۔ دوسری جانب ان خاتون جیسے لوگ بھی ہیں جو زیادہ مدد ملنے پرپریشان ہے۔سچ بات ہے انسان کسی حال میں خوش نہیں رہتا۔

مزید :

تعلیم و صحت -