3 فیصد آبادی97فیصد کیساتھ نہیں رہ سکتی: انوپم کھیر

3 فیصد آبادی97فیصد کیساتھ نہیں رہ سکتی: انوپم کھیر

 نئی دہلی(کے پی آئی ) کشمیری پنڈتوں کیلئے کشمیر میں علیحدہ بستی کے قیام پر جاری تنازعہ کے بیچ فلم سٹار انوپم کھیر نے بی جے پی کی قیادت والی حکومت کو تجویز دی کہ وادی میں سب سے پہلے سمارٹ سٹی تعمیر کرلنی چاہئے جس میں پنڈتوں کو آباد کیا جائے اور دیگر لوگ بعد میں آجائیں گے۔انہوں نے کہا کہ اس پروجیکٹ کی شروعات 10مربع کلومیٹر سے کی جاسکتی ہے۔انہوں نے کہا پہلی سمارٹ سٹی کشمیری ہندں کیلئے تعمیر کی جائے اور ابتدائی طور کشمیری ہندو ہی وہاں رہائش اختیار کریں اور اس کے بعد کوئی بھی وہاں آسکتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا پنڈتوں کی اکثریت تعلیم یافتہ ہے جو وہاں رہائش اختیار کریں گے۔ یہ پوچھنے پر کہ کیا پہلی سمارٹ سٹی پنڈتوں کیلئے ہی تعمیر ہونی چاہئے ،انہوں نے کہاہم مسلمانوں کے خلاف نہیں ہیں لیکن پہلی ترجیح پنڈتوں کو ہی دی جائے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ جموں و کشمیرمیں دفعہ370 کومنسوخ کیا جائے کیونکہ ریاست کو درپیش اکثر مسائل کی بنیادی وجہ یہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ علاحدگی پسند کشمیر کے اکثریتی طبقے کی نمائندگی نہیں کرتے ہیں جو امن کے متلاشی ہیں۔انوپم کھیر اتوار کوایک تقریب پر نامہ نگاروں کے ساتھ گفتگو کررہے تھے۔انہوں نے کہا کہ جو لوگ پنڈتوں کو ٹان شپ فراہم کرنے کے خلاف ہیں ،وہ بنیادی طورسکیولرازم کے نظریہ کے خلاف ہیں۔ کھیر نے کہا پنڈت کشمیر کے پشتینی باشندے ہیں۔ انہیں فیصلہ کرنا ہے کہ وہ کیسے اور کہاں رہائش اختیار کریں ۔علاحدگی پسند یا کوئی اور انہیں مشورہ نہیں دے سکتا ہے کہ انہیں کیا کرنا چاہئے؟ کھیر نے مزید کہایہ مرکز کی ذمہ داری ہے کہ وہ کشمیری پنڈتوں کی بازآبادکاری کیلئے ضروری اقدامات کرے ۔ انوپم کھیر نے کہا کہ مائیگرنٹ پنڈتوں کیلئے یہ ناممکن ہے کہ وہ وادی لوٹ کر اپنے اپنے علاقوں میں رہائش اختیار کریں کیونکہ وہ وہاں اپنے آپ کو محفوظ تصور نہیں کریں گے اور ان کی اکثر ملکیت پر قبضہ کیا گیا ہے یااآن میں تحریف کی گئی ہے۔انہوں نے کہایہ ناممکن ہے کہ تین فیصد لوگ 97فیصد لوگوں کے ساتھ گھل مل جائیں جنہوں نے ہمیں وہاں سے نکالا اورآپ اس دور میں واپس نہیں جاسکتے ہیں جہاں صرف دردناک یادیں ہوں۔اس موقعہ پر کھیر نے انجینئر رشید کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ پنڈتوں کو معافی مانگنے کا مشورہ دینا انتہائی افسوسناک ہے۔کھیر کے مطابق دکھ اس بات کا ہے کہ انجینئر نے یہ مشورہ انہیں نہیں دیا جو وادی میں پنڈتوں کو نکالنے کیلئے ذمہ دار ہیں۔

مزید : عالمی منظر


loading...