معاشرتی برائیوں کی عکاس فلم ’’داغ‘‘

معاشرتی برائیوں کی عکاس فلم ’’داغ‘‘

حسن عباس زیدی

ڈائریکٹرعابد نسیم کی زیر تکمیل نئی فلم ’’داغ‘‘کی شوٹنگ ان دنوں تیزی سے جاری ہے ۔معاشرتی برائیوں کی عکاس پشتو میں بنائی جانے والی فلم ’’داغ‘‘جلد عام نمائش کے لئے پیش کی جائے گی۔اس فلم کے رائٹرسلیم مراد اور ڈائریکٹر آف فوٹو گرافی اقبال شاہ ہیں۔دوران شوٹنگ عابد نسیم کی معاونت کے فرائض جنگریز خان انجام دے رہے ہیں۔فلم کے مکالمے فخر الدین خویشکوی نے تحریر کئے ہیں۔اس میگا پراجیکٹ کے اہم فنکاروں میں شاہد خان،زندگی ،آصف خان،شاہ جہاں خان،شہناز بیگم،نایاب، اور دیگر شامل ہیں۔فلم’’داغ‘‘میں مرکزی کردار ادا کرنے والی معروف ماڈل و اداکارہ زندگی نے کہاہے کہ فلم انڈسٹری میں تبدیلی نئے اور ٹیلنٹڈ فنکاروں کے ذریعے لائی جاسکتی ہے ۔ ان کاکہناتھاکہ ملک میں موجود ٹیلنٹ کی صلاحیتوں کااستعمال صحیح معنو ں میں نہیں کیاجاتایہی وجہ ہے کہ ہمارے آرٹسٹ بھارت کارخ کرتے ہیں اوربھارت نے ہمیشہ پاکستانی فنکارو ں کی صلاحیتوں کابھرپورفائدہ اٹھایاہے ۔ان کاکہناتھاکہ سینئرفنکارایک اکیڈمی کی حیثیت رکھتے ہیں ۔ان کی راہنمائی میں نئے آرٹسٹ اپنے فن کوبہتراندازمیں اجاگرکرسکتے ہیں۔فلمسازوں اورہدایتکاروں کوچاہیے کہ وہ میرٹ پرنئے آرٹسٹوں کوفلموں میں کاسٹ کریں تاکہ نوجوان نسل بھی پاکستانی فلموں کی جانب راغب ہواورفلم انڈسٹری ترقی کرے زندگی نے کہا کہ ہمارے ملک میں جدید ٹیکنالوجی متعارف ہوچکی ہے اورتعلیم یافتہ تیکنیک کاراس سے مستفید ہورہے جوکہ پاکستان فلم انڈسٹری کے لئے خوش آئندہے ۔میں اس وقت دو فلموں میں مرکزی کردار ادا کررہی ہوں۔ڈائریکٹر عابد نسیم ایک محنتی ڈائریکٹر ہیں وہ اس سے قبل کئی شاہکار اور کامیاب فلمیں بنا چکے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں زندگی نے کہا ہے کہ میں نے ہمیشہ کم مگر معیاری کام کو ترجیح دی ہے۔ پاکستان فلم انڈسٹری کی بحالی کے لئے انقلابی اقدامات اٹھانا ہوں گے اور اس کے لئے سٹیج ،ٹی وی میں کام کرنیوالی باصلاحیت اور خوبصورت اداکاراؤں کو بھی فلموں میں کام کرنے کے مواقع ملنے چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ فلم انڈسٹری کی ترقی میرا خواب ہے ، گو کہ میں پشتو فلموں میں بہت مصروف ہوں مگر اجتماعی طور پر میں پاکستان فلم انڈسٹری کی بحالی کی خواہشمند ہوں اور اس کے لئے ضروری ہے کہ فلم کے تمام شعبوں میں نئے لوگوں کو مواقع ملنے چاہیے اور خاص طور پر اداکاری کے میدان میں ٹی وی اور سٹیج کے باصلاحیت اداکاروں کو آگے لانا چاہیے تاکہ انڈسٹری میں نئے اداکاروں کو اپنی صلاحیتیں منوانے کا موقع مل سکے ۔ بالی ووڈ کی انڈسٹری میں نئے اداکاروں کو متعارف کروانے کا رحجان عام ہے جبکہ اس کے مقابلے میں لالی وڈ میں پرانے اداکاروں سے ہی کام چلایا جا رہا ہے ۔جب تک نئے خون کو آگے آنے کا موقع نہیں ملتا انڈسٹری کی بحالی میں اتنی ہی مشکلات پیش آئیں گی ۔فرینڈز فلمز کے پیشکش کے پروڈیوسر شاہ جہاں کان،معاون پروڈیوسرز بلال خان اور اشفاق خان ہیں۔

مزید : ایڈیشن 1


loading...