کلرکس اایسوسی ایشن کے متعدد عہدیدار عہدوں سے فارغ فیصلے کالعدم قرار

کلرکس اایسوسی ایشن کے متعدد عہدیدار عہدوں سے فارغ فیصلے کالعدم قرار

 لاہور(وقائع نگار)آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن کے مرکزی چیئرمین نذرحسین کورائی نے بد انتظامی ،غیر اخلاقی ا، غیر مہذبانہ اور غیر آئینی رویہ پر صوبائی اور ضلعی تنظیم کے متعدد عہدیداروں کو انکے عہدوں سے فارغ کرتے ہوئے انکے تمام فیصلوں کو کالعدم قرار دیددیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن (ایپکا )کے مرکزی چیئرمین نذرحسین کورائی نے دیگر اہم عہدیداروں کے ہمراہ گذشتہ روز زراعت ہاؤس ڈیوس روڈپر ہنگامی پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ ایپکا کی مرکزی جنرل کونسل کا اجلاس 13اپریل کو باغ جناح قائد اعظم لائبریری میں طلب کیا گیا تھا جس میں آئین کی رو سے پاکستان بھر سے عہدیداران کو شرکت کا حق حاصل تھا لیکن مذکورہ اجلاس میں پنجاب ، بلوچستان اور سندھ کے دور درازصوبوں سے آنے والی قیادت کو منظم سازش اور غیر آئینی اختیارات استعمال کرتے ہوئے شرکت سے روک دیا گیا۔    جو کہ نہ صرف غیر آئینی تو ہے ہی بلکہ غیر اخلاقی رویہ بھی ہے۔بظاہر ایسا دکھائی دیتا کہ کہ منظم سازش کا شکار عہدیداروں نے آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن کو ایک مرتبہ پھر تقسیم کرنے کی کوشش کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں بھی ایسے واقعات ہوئے جس پر میں تحفظات کا اظہار کیا اور ایک لاکھ سے کلرکس کے مستقبل کئے دونوں گروپس کا انضمام کیا گیا لیکن اس صورتحال میں ایسے عہدیداروں کے خلاف سخت کارروائی کی ضرورت تھی جنہوں نے مرکزی سینئر نائب صدر ارباب نصراللہ خان کاسی،صوبہ سند ھ ایپکا کے سیکرٹری مراد علی چاچڑاور دیگردرجنوں سینئرعہدیداروں کو اجلاس میں شرکت سے روک دیا ۔ انہوں نے کہا کہ میں نذر حسین کورائی بطور مرکزی چیئر مین ایپکا پاکستان 13اپریل کو ہونے والے غیر آئینی اجلاس کی تمام کارروائی کو کالعدم قرار دیتے ہوئے غیر مہذب رویہ اور غیر اخلاقی پر دوست محمد بروہی ، خالد جاوید سنگھیڑا، ظفر علیخان، محمد افضل گورائیہ، صفدر حسین اور مختار گجر کو انکے عہدوں سے فارغ کردیا ہے۔ ان افراد کو اب آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ آئندہ کیلئے لائحہ عمل کا فیصلہ اگلے اجلاس میں کیا جائے گا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...