حکومت بار بار وعدوں کے باوجود مطالبات پورے نہیں کررہی ، ایپکا

حکومت بار بار وعدوں کے باوجود مطالبات پورے نہیں کررہی ، ایپکا

لاہور( پ ر) آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن (ایپکا ) کا اجلاس گزشتہ روز محکمہ خوراک، لٹن روڈ لاہور میں زیر صدرات حاجی محمد ارشاد چوہدری، صوبائی صدر ایپکا پنجاب منعقد ہوا جس میں لاہور بھر کے تمام محکمہ جات کے صدرووجنرل سیکرٹری صاحبان نے شرکت کی و دیگر قائدین ایپکا لالہ محمد اسلم مرکزی ایڈیشنل جنرل سیکرٹری ایپکا پاکستان، محمد یونس بھٹی صدر ایپکا لاہور ڈویژن، ریاض الدین، محمد اکرم سلطان چیئرمین ایپکا پنجاب، رانا محمد اشرف صدر اے جی آفس پنجاب، راشداحمد خان صدر محکمہ صحت پنجاب، غلام مصطفےٰ صدر محکمہ خوراک و ضلع لاہور کے تمام محکمہ جات نے خصوصی طور پر شرکت کی۔   اجلاس میں سرکاری ملازمین کے مطالبات تاحال التوا کا شکار ہونے پر شدید تشویش کا اظہار کیا گیا ، اس موقع پر حاجی محمدارشاد چودھری نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 26 مارچ2015 ء احتجاج و ڈے اینڈ نائٹ دھرنا کے دوران رانا ثناء اللہ و دیگر حکومتی نمائندگان اور ایپکا پنجاب کی مشترکہ صوبائی قیادت کے درمیان طویل مذاکرات جس میں کہا گیا تھا کہ مطالبات کی منظوری دی گئی ہے اور باقاعدہ نوٹیفکیشن دو ہفتوں میں کردئیے جائیں گے ان مطالبات پر تاحال حکومت پنجاب نے عملدرآمد نہیں کروایا ہے جس کے باعث ملازمین میں تشویش اور مایوسی پھیل کر رہ گئی ہے۔ حکومت اپنے وعدوں سے مکر رہی ہے مذاکرات کے دوران جو مطالبات پیش کئے گئے تھے ان میں بجٹ 2013 ء میں دیگر صوبوں سے 5% فرق کا خاتمہ کرنا،صوبہ خیبر پختونخواہ کی طرز پر اپ گریڈیشن، گریڈایک تا سولہ تک تمام سرکاری ٹیکنیکل و نان ٹیکنیکل ملازمین کوبلا امتیاز ٹائم سکیل پروموشن کا اجراء کرنا،جن محکمہ جات کے سروس رولز ابھی تک نہ بنے ہیں وہ جلد اپنا کیس S&GAD کو بھجوانے کی منظوری دی جائے و دیگر شامل تھے۔آخر پراجلاس میں متفقہ طور پر خادم اعلیٰ پنجاب سے اپیل کی گئی کہ وہ ایپکا کے مندرجہ بالا مطالبات جن کااعلان حکومتی نمائندگان نے کیا تھا کا بلا تاخیر نوٹیفیکشن کرنے کے احکامات جاری کریں تاکہ سرکاری ملازمین میں پھیلی مایوسی اور تشویش ختم ہو سکے۔ اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ مطالبات تا حال منظور نہ ہونے پر ایپکا پنجاب کا اجلاس اپریل کے آخری ہفتے میں منعقد کیا جائے گا جس میں تمام ڈویژنل و ضلعی صدرووجنرل سیکرٹری صاحبان شرکت کریں گے اور آئندہ کے احتجاج کے لیے لائحہ عمل مرتب کیا جائے گا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...