مقدمات کی سماعت کیلئے ماتحت عدالتوں کو تھانے تفویض

مقدمات کی سماعت کیلئے ماتحت عدالتوں کو تھانے تفویض

لاہور(نامہ نگار) ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج طارق افتخار احمد نے سیشن کورٹ عدالتوں کے جوڈیشل افسران مقدمات کی نوعیت کے مطابق سماعتیں سونپ دی ہیں فاضل جج نے قتل اور ضمانت کی درخواستوں کی سماعت کیلئے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججوں کو ایک ایک تھانہ تفویض کردیا ۔ نوٹیفکیشن کے مطابق چودھری محمد طارق جاوید کو تھانہ سبزہ زار ایڈیشنل ڈسٹرکٹ ایند سیشن جج چودھری منیر احمد کو تھانہ جوہر ٹاؤن ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج شبر حسین اعوان کو تھانہ جنوبی چھاؤنی ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج محمد نوید اقبال تھانہ نشتر کالونی،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ ایند سیشن سیشن جج محمد اصغر خان کو تھانہ ساندہ،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ ایند سیشن جج نسیم احمد ورک کو تھانہ چوہنگ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج شازب سعید کو تھانہ قلعہ گوجر سنگھ،ایڈیشنل خاتون ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج شاہدہ سعید کو تھانہ فیکٹری ایریا ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج صادق مسعود صابر کو تھانہ کوٹ لکھپت،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج عامر شہباز میر کو تھانہ غالب مارکیٹ ،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججناصر جاوید رانا کو تھانہنواب ٹاؤن،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ ایند سیشن جج مبشر ندیم خان کو تھانہ گلشن راوی اور ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج محمد شیر عباس اعوان کو تھانہ اقبال ٹاؤن الاٹ کیا گیاہے جبکہ مذکورہ 13 ججز کی عدالتوں میں صرف قتل کے مقدمات کی سماعتیں ہونگی اس کے علاوہ فاضل ڈسٹرکٹ ایند سیشن جج نے مزید11 ججز کو مختلف فوجداری نوعیت کے مقدمات کی سماعتیں سونپنے کے علاوہ انہیں درخواست ضمانتوں کی سماعتوں کیلئے تھانے بھی الاٹ کئے ہیں جاری ہونے والے نوٹیفکیشن کے مطابق ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج عبدالرحمان کو تھانہ باغبانپورہ اور گرین ٹاؤن،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج طارق خورشید کواجہ کو تھانہ برکی ،ڈیفنس بی اور تھانہ شیرا کوٹ،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج گلزار احمد خالد کو تھانہ اکبری گیٹ، شاہدرہ ٹاؤن اور تھانہ مزنگ،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج رفاقت علی قمر کو تھانہ ایف آئی اے،اسلام پورہ اور تھانہ راوی روڈ،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج محمد ندیم کو تھانہ گلبرگ،گڑھی شاہو اور تھانہ گجر پورہ،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج احمد کامران کو تھانہ شالیمار،ماڈل ٹاؤن اور تھانہ باٹا پور،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ملک شفیق احمد کو تھانہ مصطفی ٹاؤن، ہنجرا وال اور تھانہ اے سی ای،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سید محمد عمر کو تھانہ ہیئر،ٹاؤن شپ اور تھانہ مصطفی آباد،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج میاں جاوید اکرم کو تھانہ ڈیفنس سی،لوئر مال اور تھانہ بھاٹی گیٹ،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ساحر اسلام کو تھانہ سندر،پرانی انارکلی اور تھانہ داتا دربار،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نعیم عباس کو تھانہ شاہدرہ،کاہنہ اور تھانہ ملت پارک الاٹ کیا ہے مزید برآں فاضل ڈسٹرکٹ ایند سیشن جج نے سول اپیلیں وغیرہ کی سماعتوں کے لئے 13 ججز کو نامزد کیا ہے جبکہ درخواست ضمانتوں کی سماعت کے لئے انہیں تھانے بھی الاٹ کئے ہیں سول اپیلوں کی سماعت پر مامور تیرہ ججز کے نام اور ان کو الاٹ ہونے والے تھانوں کی تفصیل یوں ہے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج خادم حسین کو تھانہ مانگا منڈی،مسلم ٹاؤن اور تھانہ سٹی رائیونڈ،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج عابد رضوان عابد کو تھانہ لوہاری گیٹ،سول لائنز اور تھانہ فیصل ٹاؤن،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج قمر سلطان کو تھانہ ہڈیارہ،شادمان،نولکھا اور تھانہ قائد اعظم انڈسٹریل ایریا،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج حسنین قادر کو تھانہ مناواں ،نواں کوٹ اور تھانہ وحدت کالونی،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج انجم رضا سید کو تھانہ مصری شاہ ،ٹبی سٹی اور تھانہ ڈیفنس اے،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ظفر اقبال تارڑ کو تھانہ غازی آباد،لیڈی پولیس سٹیشن اور تھانہ لیاقت آباد،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سہیل شفیق کو تھانہ نصیر آباد لٹن روڈ اور تھانہ گارڈن ٹاؤن،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج محمد طفر اقبال کو تھانہ ستوکتلہ،ہربنس پورہ اور تھانہ سرور روڈ،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج محمد ریاض کو تھانہ شمالی چھاؤنی، گوالمنڈی اور تھانہ یکی گیٹ، خاتون ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج عنبرین قریشی کو تھانہ مستی گیٹ ،گلشن اقبال، اور تھانہ لارہ اڈہ،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج عمران خوشید کو تھانہ نئی انارکلی،شفیق آباد تھانہ شاد باغ،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججسرفراز علی کو تھانہرنگ محل، سمن آباد،اور تھانہ اچھرہ،جبکہ خاتون ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج عائشہ کالد کو تھانہ موچی گیٹ،بادامی باغ اور تھانہ ریس کورس الاٹ کیا گیا ہے جبکہ سینئر ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج شیراز کیانی جوڈیشل انکوائریوں کے علاوہ انشورنش کمپنیوں کے خلاف شہریوں کی شکایات کی سماعتیں کریں گے جبکہ اس کے علاوہ وہ تھانہ مغلپورہ اور تھانہ ریلوے مغلپورہ میں درج مقدمات میں ملزموں کی قبل از گرفتاری یا بعد از گرفتاری کی درخواست ضمانتوں کی سماعت بھی کریں گے۔ ماتحت عدالتیں

مزید : صفحہ آخر


loading...