کرپشن پر18محکوں کے ملزمان کوگرفتار کرکے چالان اینٹی کرپشن کوبھجوادئیے گئے

کرپشن پر18محکوں کے ملزمان کوگرفتار کرکے چالان اینٹی کرپشن کوبھجوادئیے گئے

 لاہور(ارشد محمود گھمن)اینٹی کرپشن لاہورریجن نے صوبائی دارلحکومت میں مختلف محکموں کے خلاف کرپشن ،بدعنوانی ،کیخلاف دی جانے والی درخواستوں پر23 مقدمات اندراج کرکے 18محکوں کے ملزمان کوگرفتار کرکے چالان عدالت اینٹی کرپشن لاہوربھجوادئیے ۔جبکہ 6 محکموں کے افسران کے خلاف متعلقہ سیکرٹری محکمہ کوقانونی کارروائی کرنے کی سفارش کی ۔علاوہ ازیں پنجاب کے محکوموں کے خلاف کرپشن میں ملوث افراد کے خلاف دی جانے والی 96درخواستوں کی انکوائریاں مکمل کرکے ڈراپ کردی گئیں۔تفصیلات کے مطابق اینٹی کرپشن ریجن لاہورکوصوبائی دارلحکومت میں سرکاری محکموں کے خلاف کرپشن ،بدعنوانی ،رشوت کے متعلق دی جانے والی سینکڑوں درخواستوں پرمحکمہ کے افسران نے انکوائریاں کرکے 96درخواستوں کی پیروی نہ کرنے اورکرپشن کے ثبوت فراہم نہ کرنے پرڈراپ کردی گئیں ۔جبکہ 23مقدمات سرکاری محکموں ایل ڈی اے ،ریونیو،لوکل گورنمنٹ وغیرہ کے خلاف درج کرکے انکوائریاں کی گئیں جس میں 18مقدمات کی پیروی کرنے پرملزمان کے خلاف کارروائی کرکے چالان عدالت اینٹی کرپشن لاہوربھجوادئیے گئے اور6مقدمات میں ملوث افراد کیخلاف محکمانہ انکوائری کرکے کارروائی کرکے سفارش کی گئی ہے ۔طارق محمودڈائریکٹر اینٹی کرپشن ریجن لاہورنے روزنامہ پاکستان کوبتایاکہ اینٹی کرپشن ریجن آفس میں نا مکمل سٹاف اورناقص بلڈنگ کی وجہ سے مقدمات کی انکوائریاں اورکارروائی میں تاخیر ہوتی ہے ۔اینٹی کرپشن ریجن لاہورمیں انکوائری آفیسران کووسائل میں بھی کافی حد تک دشواریوں کاسامناکرناپڑتاہے۔ چالان

مزید : صفحہ آخر


loading...