تربت ،فورسز کی مشترکہ کاروائی ،مزدوروں کے قتل میں ملوث 13دہشتگرد ہلاک

تربت ،فورسز کی مشترکہ کاروائی ،مزدوروں کے قتل میں ملوث 13دہشتگرد ہلاک

تربت(مانیٹرنگ ڈیسک ،اے این این)تربت میں 20مزدوروں کے قتل میں ملوث دہشتگردوں کے خلاف حساس اداروں کی مشترکہ کارروائی، بی ایل ایف کمانڈر سمیت13ہلاک،ایک کمانڈر گرفتار،مارے جانے والے کمانڈر کی شناخت حیات اور گرفتار کماندڑ کی شناخت ظریف کے نام سے ہوئی، کارروائی میں600اہلکاروں نے حصہ لیا، ہیلی کاپٹرز اور اے پی سیز کی بھی مدد لی گئی،دہشتگردوں کی کمین گاہوں سے بھاری مقدار میں اسلحہ و گولہ باردود برآمد۔تفصیلات کے مطابق پیر کو علی الصبح سکیورٹی فورسز اور حساس اداروں نے تربت کے علاقے گیبن کے گاؤں گوماڑی میں کالعدم تنظیم بلوچستان لبریشن فرنٹ کے دہشتگردوں کی اطلاع پر مشترکہ آپریشن کیا جس میں حساس اداروں کے علاوہ ایف سی،اسپیشل آپریشن ونگ اور مکران سکاؤٹس کے600اہلکاروں نے حصہ لیا۔فورسز کو ہیلی کاپٹرز اور اے پی سیز کی مدد بھی حاصل تھی۔آپریشن میں 13دہشتگرد ہلاک اور ایک کمانڈر کو گرفتار بھی کیا گیا ہے۔مارے جانے والوں میں بی ایل ایف کا کمانڈر حیات بھی شامل ہےء جبکہ گرفتار کمانڈر کا نام ظریف بتایا گیا ہے۔کارروائی میں فورسز اور دہشتگردوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوا جو کافی دیر تک جاری رہا تاہم فورسز کا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔سکیورٹی فورسز نے دہشتگردوں کی کمین گاہیں بھی تباہ کی ہیں اور بھاری مقدار میں اسلحہ بھی برآمد کیا ہے۔برآمد کئے گئے اسلحہ میں بارودی سرنگیں،دھماکہ خیز مواد،گولہ بارود،راکٹ لانچر اور خودکار ہتھیار بھی شامل ہیں۔ترجمان ایف سی کے مطابق مارے جانے والے دہشتگرد جمعہ کی رات تربت میں 20مزدوروں کے قتل سمیت غوا برائے تاوان، ٹارگٹ کلنگ، ڈکیتی اور ایم 8 شاہراہ پر سیکیورٹی فورسز پر حملوں میں ملوث تھے۔ حساس اداروں کی جانب سے اطلاع تھی کہ کالعدم تنظیموں کے دہشت گردوں نے تربت کے علاقے گو ماڑی میں پناہ لے رکھی ہے۔ایف سی ترجمان کا کہنا ہے کہ اس کارروائی میں فائرنگ کے تبادلے میں 13 عسکریت پسند ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔ انھوں نے مزید بتایا کہ ہلاک ہونے والوں میں کالعدم تنظیم کا ایک کمانڈر بھی شامل ہے جبکہ ایک اور کمانڈر کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ آئی جی ایف سی نے سیکیورٹی فورسز کے خلاف کامیاب آپریشن کرنے پر جوانوں کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے کہ صوبے میں امن کے لئے ہر قربانی دیں گے اور شہداء کے خون کے ہر قطرے کا حساب اور بدلہ لیا جائے گا۔

مزید : صفحہ اول


loading...