حکو مت نے مارکیٹیں زبر دستی رات 8 بجے بند کروائیں تو احتجاج کرینگے،تاجر تنظیمیں

حکو مت نے مارکیٹیں زبر دستی رات 8 بجے بند کروائیں تو احتجاج کرینگے،تاجر ...

 لاہور( وقائع نگار)آل پاکستان انجمن تاجران کے پلیٹ فارم سے تاجر تنظیمو ں کے رہنماؤ ں نے حکو مت کی جانب سے رات 8بجے مارکیٹیں اور بازار بند کر نے کے فیصلے کو یکسر مستر د کر تے ہوئے حکو مت کو باورکروایا ہے کہ بجلی کی نہ سمجھ آنے والی بچت کیلئے تاجروں کا معاشی قتل کر نے کی بجائے لائن لاسز کو دور کریں، اسلا م آباد اور پنجاب کے تاجروں کے ساتھ سو تیلی ماں جیسا سلو ک برداشت نہیں کیا جائے گا اوراگر حکو مت نے زبر دستی دکانیں اور تجارتی مراکز رات8بجے بند کروائے تو تاجر برادری احتجاجی مظاہروں کے علاوہ عدالت سے بھی رجوع کرے گی ۔ان خیالا ت کا اظہار آل پاکستان انجمن تاجران کے مرکزی جنرل سیکر ٹری نعیم میر نے گزشتہ روز ہنگامی پر یس کا نفرنس کے دوران کیا جبکہ اس مو قع پر انجمن تاجران پنجاب،لاہور کر یا نہ مر چنٹس ایسو سی ایشن ، چیمبر آف کامرس پروگر یسو گروپ ، آزاد گروپ کے چوہدری محبو ب سر کی ، راؤ اکر م ، راجہ حسن اختر راجہ ، عبدلودود علو ی ، شیخ ارشد ،آغا عدنان،ملک طاہر ، ملک فیض، شیخ عرفان ،علی نصرت بٹ،میاں طاہر انقلا بی، بابر اسماعیل بٹ،محمد ہمایو ں اورندیم سمیت دیگررہنماء بھی مو جو د تھے ۔ نعیم میر کا کہنا تھا کہ میڈیا سے معلوم ہو ا ہے کہ حکو مت نے تاجروں کا معاشی قتل کر نے کے لیے رات 8بجے تجارتی مراکز اور مارکیٹیں بند کر نے کا فیصلے کیا ہے جس کو لاہور اور پنجاب کی تاجر برادری مستر د کر تی ہے کیو نکہ یہ اقدام قابل عمل نہیں ہو سکتا ۔گرمیو ں کا مو سم شروع ہو تے ہیں شام 7بجے سورج ڈھلتا ہے جبکہ شیڈول کے مطابق رات 8سے 10بجے تک ویسے ہی لو ڈشیڈنگ کا دورانیہ ہو تا ہے اس کا مطلب ہے دکاندار صرف ایک گھنٹہ کاروبار کر سکتے ہیں جو قابل قبو ل نہیں ۔ انھوں نے کہا کہ لاہور سمیت پنجاب کی 70مارکیٹوں میں سے ہول سیل کی 60فیصد مارکیٹیں پہلے ہی سر شام بند ہو جاتی ہیں۔انھو ں نے کہا کہ اسلا م آباد اور پنجاب میں تو رات آٹھ بجے مارکیٹیں بند کروانے کی حکمت عملی تیار کی جارہی ہے مگر ملک کے دیگر صو بوں کو اس قانو ن سے باہر رکھنا سمجھ سے بالا تر ہے ۔نعیم میر کا کہنا تھا کہ ماضی گواہ ہے کہ بجلی کی بچت کے لیے تاجروں نے حکو مت کے ساتھ تعاون کر تے ہوئے تجارتی مراکز شیڈول کے مطابق بند کیے تاہم لاہور سمیت پنجاب کے کنٹو نمنٹ ایر یاز کے تجارتی مراکز کیو ں کھلے رکھنے کی اجازت ہے۔ انھو ں نے کہا کہ حکومت تاجروں کا معاشی قتل کرنے کی بجائے دیگر طریقوں سے بجلی کی بچت کو یقینی بنائے ۔ ایک سوال کے جواب میں انھو ں نے کہا کہ اگر حکو مت پنجاب نے زبر دستی دکانیں بند کروانے کی کو شش کی تو احتجا ج سمیت تاجر برادری عدالت کا دروازہ کھٹکھٹانے پر مجبو ر ہو گی ۔ اس مو قع پر کریانہ مر چنٹس ایسو سی ایشن نے بھی رات آٹھ بجے دکانیں بند نہ کر نے کے اعلان پر انجمن تاجران پاکستان کے مو قف کی تائید کی۔ تاجر تنظیمیں

مزید : صفحہ آخر


loading...