رات کی تاریکی میں نظروں سے اوجھل رکھنے والے سٹیکر ایجاد

رات کی تاریکی میں نظروں سے اوجھل رکھنے والے سٹیکر ایجاد
رات کی تاریکی میں نظروں سے اوجھل رکھنے والے سٹیکر ایجاد

  


کیلیفورنیا(مانیٹرنگ ڈیسک) عمومی طورپر پرتشددعلاقوں میں رات کی تاریکی میں مسلح افواج کے اہلکاروں کو زیادہ خطرات لاحق ہوتے ہیں اور کئی مرتبہ شدت پسندوں کے ہتھے بھی چڑھ جاتے ہیں لیکن اب ایسے سٹیکر تیار کرلیے ہیں جو کسی بھی فوجی کو رات کے اوقات میں نظروں سے اوجھل کردیں گے۔امریکی ماہرین کی جانب سے ریفلیکٹن نامی یہ مادہ سمندروں میں عام طورپر پائی جانے والی آکٹوپس نسل کی مچھلی سکوئیڈ کے ایک پروٹین سے حاصل کیا گیا ہے جسے رفلیکٹن کا نام دیا گیا ہے۔ ماہرین نے اس کی باریک پرتیں تیار کی ہیں جنہیں افواج کے یونیفارم پر چپکایا بھی جاسکتا ہے۔ سمندری تہوں میں آکٹوپس ماحول کے لحاظ سے رنگ بدلتی ہیں اور بہت حد تک نگاہوں سے اوجھل ہوجاتی ہیں۔سائنسدانوں نے تحقیق کے بعد اسکوئیٹد کے جسم میں موجود ایک خاص پروٹین الگ کرکے اسے ریفلیکٹن کا نام دیا ہے جس سے باریک سٹیکر بنائے گئے ہیں جو روشنی کو خاص انداز سے منعکس کرتے ہیں اور کسی بھی رنگ میں ڈھل سکتے ہیں جبکہ یہ سٹیکر چھ برس کی تحقیق کے بعد تیار کیے گئے ہیں۔

مزید : علاقائی


loading...