پاکستان کی تاریخ کا انوکھاکیس، تین دن کی بچی کی ماں کیخلاف درخواست منظور

پاکستان کی تاریخ کا انوکھاکیس، تین دن کی بچی کی ماں کیخلاف درخواست منظور
پاکستان کی تاریخ کا انوکھاکیس، تین دن کی بچی کی ماں کیخلاف درخواست منظور

  


لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) ماں باپ کی علیحدگی پر تین دن کی بچی کی طرف سے دائر درخواست لاہورہائیکورٹ نے سماعت کیلئے منظور کرتے ہوئے پولیس کو حکم دیاہے کہ بچی کی ماں کو منگل کی سہہ پہر تین بجے عدالت میں پیش کیاجائے ۔

لاہورہائیکورٹ کے جسٹس یاورعلی نے تین دن کی بچی ’امید‘ کی طرف سے دائر درخواست کی سماعت کی ۔ درخواست گزار نے موقف اپنایاکہ تین دن کی عمرمیں ماں فوزیہ اُسے چھوڑ کر چلی گئی ، وہ گذشتہ تین دن سے ماں کیلئے تڑپ رہی ہے ، ماں کو اس کے حوالے کیاجائے یاوہ بھی ماں کے پاس جانے کو تیار ہے ۔بچی کے والدکاکہناتھاکہ اُس کی غلطی کی سزا اُس کی معصوم بچی کوکیوں دی جارہی ہے،سسرال والے جان بوجھ کر گھر تباہ کررہے ہیں ۔ درخواست گزار بچی کی دادی کاکہناتھاکہ تین دن سے معصوم نے کچھ کھایاپیانہیں ، وہ معاملہ سلجھانے کو تیارہیں حتیٰ کہ بچی کوبھی والدہ کے حوالے کرنے پر آمادہ ہیں لیکن وہ ماں کے بغیر نہیں رہ سکتی ،بچی کا کیاقصور ہے جو اس عمر میں عدالتوں میں دھکے کھائے ۔

عدالت نے درخواست سماعت کے لیے منظور کرتے ہوئے ایس ایچ اوتھانہ گجرپورہ کو حکم دیاہے کہ بچی کی ماں فوزیہ کو پیش کیاجائے اور سماعت ملتوی کردی ۔

نجی ٹی وی چینل کے مطابق جوڑے کی ایک اور اڑھائی سال کی بچی بھی ہے جس کا نام مریم ہے اور وہ والدہ کے پاس ہی ہے لیکن وہ جاتے ہوئے تین دن کی بچی باپ کے پاس چھوڑ گئی ۔

مزید : انسانی حقوق /اہم خبریں


loading...