ذکی الرحمن لکھوی کی رہائی ،سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ،پنجاب حکومت نے اپیل تیار کرلی

ذکی الرحمن لکھوی کی رہائی ،سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ،پنجاب حکومت نے ...
ذکی الرحمن لکھوی کی رہائی ،سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ،پنجاب حکومت نے اپیل تیار کرلی

  


لاہور(نامہ نگار خصوصی )پنجاب حکومت نے ممبئی حملوں کے ملزم ذکی الرحمٰن لکھوی کی نظر بندی سے رہائی کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کرلیاہے۔لاہور ہائی کورٹ نے 9اپریل کو ذکی الرحمن لکھوی کی نظر بندی کے احکامات معطل کرکے انہیں ضمانت پر رہا کردیا تھا جس کے خلاف اپیل کا مسودہ تیار کر لیا گیا ہے۔یہ اپیل محکمہ داخلہ پنجاب ،ڈی سی او اوکاڑہ اور ایڈیالہ جیل کے سپرنٹنڈنٹ کی طرف سے دائر کی جائے گی ۔اپیل میں کہا گیا ہے کہ ذکی الرحمن لکھوی کالعدم لشکر طیبہ کے آپریشنل ہیڈ ہیں ۔یہ ان لوگوں میں شامل ہیں جن کی نقل و حرکت محدود کرنے کے حوالے سے اقوام متحدہ اور سلامتی کونسل قرار دادیں منظور کرچکی ہے ۔ان کی رہائی اقوام متحدہ کی قراردادوں کے بھی منافی ہے ۔
اپیل میں کہا گیا ہے کہ امن و عامہ کی ذمہ دار انتظامیہ ہے اورعدلیہ اس اختیار میں مداخلت نہیں کرسکتی ۔علاوہ ازیں کسی شہری کی نظر بندی پر نظر ثانی کا اختیار ریویو بورڈ کے پاس ہے اور عدالت ریویو بورڈ کا اختیار استعمال کرنے کی مجاز نہیں ۔اپیل میں استدعا کی گئی ہے کہ ذکی الرحمن لکھوی کی رہائی سے متعلق لاہور ہائی کورٹ کے 9اپریل کے فیصلے کو کالعدم کیا جائے ۔ایڈووکیٹ جنرل آفس کے ذرائع نے بتایا ہے کہ آئندہ ایک دو روز میں یہ اپیل سپریم کورٹ میں دائر کردی جائے گی۔

مزید : لاہور


loading...