پمز میں مریضہ سے مبینہ زیادتی، سرکاری ہسپتالوں میں رات کے اوقات میں میل نرسز اور ڈسپنسرز کے تنہا ڈیوٹی دینے پر پابندی

پمز میں مریضہ سے مبینہ زیادتی، سرکاری ہسپتالوں میں رات کے اوقات میں میل نرسز ...
پمز میں مریضہ سے مبینہ زیادتی، سرکاری ہسپتالوں میں رات کے اوقات میں میل نرسز اور ڈسپنسرز کے تنہا ڈیوٹی دینے پر پابندی

  

فیصل آباد (ویب ڈیسک) پمز ہسپتال میں مریضہ سے میل نرس کی مبینہ زیادتی کا واقعہ منظر عام پر آنے کے بعد صوبائی حکومت نے سرکاری ہسپتال میں رات کے اوقات میں میل نرسز اور ڈسپنسرز کے تنہا ڈیوٹی دینے پر پابندی عائد کردی ہے۔ اس ضمن میں ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ پنجاب کی جانب سے محکمہ صحت کے افسران اور سرکاری ہسپتالوں کے سربراہان کو مراسلہ جاری کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ صوبائی حکومت نے پمز ہسپتال میں مریضہ سے مبینہ زیادتی کے واقعہ کا سختی سے نوٹس لیا ہے۔ ایسے واقعات کی روک تھام کے لئے ہسپتالوں میں رات کے اوقات میں میل نرس، ڈسپنسرز یا پیرامیڈیکل سٹاف سے تعلق رکھنے والے مرد ملازم کی تنہا ڈیوٹی ہرگز نہ لگائی جائے۔ رات کے اوقات میں وارڈز اور آئی سی یو میں فی میل نرس کی ڈیوٹی لگائی جائے۔ سکیورٹی کیمروں خو ہر صورت میں چالو رکھا جائے اور سکیورٹی سٹاف کو ہدایت کی جائے کہ رات8 بجے کے بعد مریض کے حقیقی رشتہ داروں کے علاوہ کسی کو وارڈ میں نہ جانے دیں۔

مزید :

فیصل آباد -