میڈیکل بورڈ نے توہین رسالت کی ملزمہ کو پاگل قرار دے دیا ،سیشن کورٹ نے بورڈ کے ارکان طلب کرلئے

میڈیکل بورڈ نے توہین رسالت کی ملزمہ کو پاگل قرار دے دیا ،سیشن کورٹ نے بورڈ کے ...
میڈیکل بورڈ نے توہین رسالت کی ملزمہ کو پاگل قرار دے دیا ،سیشن کورٹ نے بورڈ کے ارکان طلب کرلئے

  

لاہور(نامہ نگار )ایڈیشنل سیشن جج اعجاز احمد نے توہین رسالت کے مقدمہ میں ملوث ملزمہ سلمی تنویر کو پاگل قرار دے کر بوگس سرٹیفیکٹ جاری کرنے والے میڈیکل بورڈ کے 8ممبران کو 26اپریل کوریکارڈ سمیت طلب کرلیا ہے ۔استغاثہ کے مطابق ملزمہ سلمی تنویر پر الزام ہے کہ اس نے مبینہ طور پرایک تحریر چھپوا کر تقسیم کروائی ہے جس میں وہ حضور اکرم ﷺ کی ختم نبوت سے انکاری ہے اور شان محمدﷺ میں کستاخی کے الفاظ تحریر ہیں اور اس نے نبوت کا دعوی کیا ہے اور خود کو رحمةالعالمین ،پیغمبرو رسول تحریر کیا ہے جس کے بعدتھانہ نشر کالونی پولیس نے افتخار احمد کی مدعیت میں 2ستمبر2014کو افتخار احمد کی مدعیت میں مقدمہ نمبر861/13زیر دفعہ 295-Cتعزیرات پاکستان کے درج کرلیا،مقدمہ کی تفتیش SPانوسٹی گیشن ماڈل ٹاﺅن نے خود کی اور ملزمہ کو گناہگار تحریرکرکے چالان عدالت میں بھجوایا۔بعدازاں ملزمہ کی درخواست پر عدالت نے ملزمہ کا طبی معائنہ کرنے کا حکم دیا جس پر 8ممبران کے بورڈ نے ملزمہ کو پاگل قرار دیتے ہوئے 14مارچ 2015ءکو سرٹیفکیٹ جاری کیا جس پر استغاثہ کے وکیل غلام مصطفےٰ چودھری ، غلام مجتبے چوہدری، محمد مد ثر چودھری نے اپنے اعتراض داخل کئے اورکہا کہ سرٹیفیکٹ ملزم پارٹی نے ڈاکٹروں سے ساز باز ہو کر بدنیتی کی بناءپر جاری کروایا ہے تاکہ وہ ایک گھناﺅنے اورسنگین جرم کے ارتکاب پر ملنے والی سزا سے بچ سکے ۔عدالت نے عدالت نے آئندہ سماعت پر میڈیکل بورڈ کے ممبران کو طلب کرلیا ہے ۔

مزید :

لاہور -