نجی شعبہ کی سفارشات غور کرنے کے بعد بجٹ میں شامل کی جائیں

نجی شعبہ کی سفارشات غور کرنے کے بعد بجٹ میں شامل کی جائیں

 لاہور(کامرس رپورٹر) فیڈریشن آف پاکستان چیمبرزآف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ریجنل چیئرمین میاں رحمان عزیز نے کہا ہے کہ نجی شعبہ کی حوصلہ افزائی کے بغیر ترقی کا خواب پورا نہیں ہو سکتا ،حکومت بجٹ سازی میں نجی شعبہ کی سفارشات پر سنجیدگی سے غور کرنے کے بعد قابل عمل سفارشات کو بجٹ میں شامل کریں تاکہ اقتصادی ترقی کے عمل کو تیز کیا جاسکے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روزلاہور اکنامک جرنلسٹس ایسوسی ایشن(لیجا) کے اعزاز میں دئیے گئے ظہرانے میں کیا۔میاں رحمان عزیز نے کہاکہ ایف پی سی سی آئی نے سیلز ٹیکس،انکم ٹیکس اور کسٹم ڈیوٹی کے نظام کیلئے حکومت کو قابل عمل سفارشات پیش کی ہیں ، انہوں نے کہا کہ نئی صنعتوں کیلئے مراعات دی جائیں تاکہ بے روزگاری کم اور حکومت کی آمدنی بڑھے۔ ایف پی سی سی آئی نے رواں مالی سال کے دوران ریونیووصولیون کے ا ہداف حاصل کرانے میں ایف بی آرکی ہرممکن مدد کایقین دلاتے ہوئے کہا کہ ایف بی آر سیلز ٹیکس کے اربوں روپے کے ری فنڈز بھی ریلیز کرے تاکہ صنعت کارکھلے دل سے کاروبار کر سکیں۔بعدازاں ایف پی سی سی آئی اور لیجا کے درمیان ملک میں انڈسٹری کے فروغ اور باہمی تعاون کیلئے مفاہمت کی یادداشت (ایم او یو)پر بھی دستخط کئے گئے۔دونوں فریقین کی طرف سے اس عزم کا اظہا ر کیا گیا کہ مستقبل میں ملک سے بے روزگار کے خاتمہ اور صنعتی ترقی کے لئے باہمی تعاون سے کام کیا جائے گا۔اس موقع پر لیجا کے صدر محمد سدھیر چودھری نے کہا ہے کہ آج لیجا کی تاریخ کا سنہری دن ہے، انہوں نے کہا کہ سٹیک ہولڈرز کو ساتھ لئے بغیراقتصادی ترقی کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو سکے گا۔ انہوں نے کہا کہ کامرس رپورٹرزملکی ترقی و خوشحالی کا ہم جزو ہیں جن کے بغیرتجارتی، صنعتی و کاروباری بڑھوتری نامکمل ہے اور اس حوالے سے ایف پی سی سی آئی کی طرف سے لیجاکی اہمیت کو تسلیم کرنا خوش آئند ہے۔تقریب میں لاہور اکنامک جرنلسٹس ایسوسی ایشن کے صدر محمد سدھیر چودھری کو ریجنل پریس، پرنٹ اینڈ الیکٹرونک میڈیا کوآرڈینیشن کمیٹی کا سال دو ہزار سولہ کے لئے چیئرمین بنانے کا اعلان بھی کیا گیا۔اس موقع پر لیجا کے مرحوم سیکرٹری جنرل اشتیاق حسین کی مغفرت کیلئے خصوصی دعا کی گئی۔

مزید : کامرس