حکومتی کرپشن نے بچے بچے کو قرضوں میں جکڑ رکھا ہے،میاں مقصود احمد

حکومتی کرپشن نے بچے بچے کو قرضوں میں جکڑ رکھا ہے،میاں مقصود احمد

  

لاہور(خبر نگار خصوصی) امیر جماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمد نے کہا ہے کہ ملکی صورتحال انتہائی گھمبیر ہے۔ حکمرانوں کی لوٹ مار اور کرپشن نے ملک کے بچے بچے کو قرضوں میں جکڑ رکھا ہے۔ وزیر اعظم اور اُس کے خاندان پر ٹیکس چرانے اور کرپشن کے الزامات ہیں۔ چیف جسٹس آف پاکستان از خود نوٹس لے کر اپنی سربراہی میں کمیشن تشکیل دے کر آف شور کمپنیاں بنا کر ٹیکس چرانے اور قومی خزانے کو نقصان پہنچانے کے الزامات کی تحقیقات کریں اور آئین کی متعلقہ دفعات خصوصاََ دفعہ62اور63کی روشنی میں فیصلہ کریں ۔ وزیراعظم کی جانب سے اپنی مرضی کے ریٹائرڈ ججز کی سربراہی میں کمیشن بناکر اپنے لئے کلین چٹ حاصل کرنا عوام کو دھوکہ دینے کے مترادف ہے ان خیالات کا اظہار انہوں گزشتہ روزمنصورہ میں مختلف عوامی وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ ملک کی سیاسی ، معاشی صورتحال انتہائی گھمبیر ہے آئس لینڈ کے وزیر اعظم نے اپنی بیوی پر ٹیکس چرانے کا الزام لگنے کے بعد مستعفی ہونے کا اعلان کیا تاکہ آزادانہ انکوائری میں رکاوٹ نہ بنیں اور ہمارے وزیر اعظم اپنے خاندان پر الزامات لگنے کے بعد اپنی مرضی سے ریٹائرڈ ججز کی سربراہی میں کمیشن بنا کر عوام کی آنکھوں میں دھول جھونک رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ پانا مہ لیکس کے انکشافات نے ہمارے موقف کی تائید اور تصدیق کردی ہے۔ سابقہ اور موجودہ حکمران کرپشن اور لوٹ مار میں ملوث ہیں ۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی کی قیادت اور ارکان پارلیمنٹ پر کوئی الزام نہیں ہم ہر وقت اپنے آپ کو احتساب کیلئے پیش کرتے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -