رقم خرد برد ،پوسٹ ماسٹر جنرل سمیت متعلقہ حکام سے جواب طلب

رقم خرد برد ،پوسٹ ماسٹر جنرل سمیت متعلقہ حکام سے جواب طلب

  

پشاور(نیوزرپورٹر) پشاورہائی کورٹ کے جسٹس داؤدخان اور جسٹس مس مسرت ہلالی پرمشتمل دورکنی بنچ نے پوسٹماسٹرجنرل کی جانب سے جی پی او کے چار اہلکاروں سے ایف سی پنشن کی مد میں لاکھوں روپے خوردبرد کی جانے والی رقم کی ریکوری کے نوٹس پرعملدرآمد روک دیا اور پوسٹماسٹرجنرل سمیت متعلقہ حکام کونوٹس جاری کرکے جواب مانگ لیاہے فاضل بنچ نے گذشتہ روز عیسی خان ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائرجی پی او کے اہلکاروں مقصود احمد ٗ گلفام ٗ قیصراورشاہ روم کی جانب سے دائررٹ پٹیشن کی سماعت کی اس موقع پر درخواست گذاروں کو بتایاگیاکہ انہیں پوسمٹاسٹرجنرل کی جانب سے نوٹس موصول ہوئے ہیں جس میں مجموعی رقم ایک کروڑ سے زاہدظاہرکرتے الزام عائد کیاگیاہے کہ انہوں نے ایف سی کی پنشن کی مد میں مذکورہ رقم خوردبرد کی ہے لہذاان کے ذمہ واجب الادارقم فوری واپس کی جائے بصورت دیگران کے خلاف محکمانہ کارروائی کی جائے گی اس موقع پر ان کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ مذکورہ رقم کی ریکوری کے حوالے سے ضابطے کی کارروائی نہیں کی گئی کیونکہ قانون کے مطابق انہیں پہلے شوکاذ نوٹس جاری کرناچاہئیے لیکن قانونی ضابطے پورے نہیں کئے گئے ہیں لہذانوٹس کالعدم قرار دئیے جائیں فاضل بنچ نے ابتدائی سماعت کے بعد نوٹس پرعملدرآمد روکتے ہوئے متعلقہ حکام سے جواب مانگ لیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -