ڈیرہ ،لوڈشیڈنگ ،کرپشن اور بھتہ خوری کیخلاف شہر بھر میں شٹر ڈاؤن ہڑاتال

ڈیرہ ،لوڈشیڈنگ ،کرپشن اور بھتہ خوری کیخلاف شہر بھر میں شٹر ڈاؤن ہڑاتال

  

ڈیرہ اسماعیل خان(بیورورپورٹ)مرکزی انجمن تاجران آل پارٹیزکانفرنس کی اپیل پرڈیرہ میں واپڈاکے ظلم وستم‘ کرپشن‘ بھتہ خوری‘ناجائزلوڈشیڈنگ ‘ اوور ریڈنگ‘ جرمانوں کیخلاف شہربھرمیں شٹرڈاؤن ہڑتال واحتجاجی جلسہ‘جلسے میں کرپٹ افسران کے ٹرانسفر ‘احتساب‘لوڈشیڈنگ میں کمی‘جرمانوں کی معافی اورعوامی نمائندوں سے اپناکرداراداکرنے کامطالبہ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روزآل پارٹیزکانفرنس کے اعلامیہ کے مطابق ڈیرہ اسماعیل خان میں واپڈاڈیرہ کودی گئی دس دن کی مہلت ختم ہونے کے بعدمرکزی انجمن تاجران اورآل پارٹیزکانفرنس ڈیرہ کے نمائندگان راجہ اخترعلی‘سہیل احمداعظمی ‘ابراہیم لاہوری‘حنیف پیپا‘چوہدری محمدجمیل‘محمدرمضان کی قیادت میں ایک بھرپوراحتجاجی جلسہ منعقدکیاگیاجبکہ تاجروں نے صبح سے گیارہ بجے تک مکمل شٹرڈاؤن ہڑتال کی۔احتجاجی جلسہ جوڈیرہ کے سنٹرچوگلیہ کے مقام پرمنعقدکیاگیا۔اس موقع پرخیالات کااظہارکرتے ہوئے سہیل اعظمی‘راجہ اخترعلی‘محمدرمضان‘محمدجمیل‘محمدنواز‘شبیہ الحسن‘حاجی غلام سبحانی‘ابراہیم لاہوری‘سابق صدرڈسٹرکٹ بارایسوسی ایشن سردارقیضارمیانخیل‘سابق ایم پی اے مظہرجمیل علیزئی‘وقارایڈووکیٹ‘محمدشاہ‘پی ٹی آئی کی صدارت کے امیدوارڈاکٹراعجاز‘ضلعی امیرجماعت اسلامی زاہدمحب اللہ ایڈووکیٹ‘ممبرضلع کونسل محمدحنیف پیپاایڈووکیٹ‘کونسلرالائنس کے چےئرمین تیمورعلی خان‘وقاص‘مسلم لیگ ن کے ضلعی جنرل سیکرٹری چوہدری ریاض ایڈووکیٹ‘محمدخان نیازی‘پی ٹی آئی کے شیخ محمداکمل‘سمیع اللہ برکی اورحاجی محمدنواز ودیگرنے اپنے خطاب میں انتہائی افسوس کااظہارکرتے ہوئے کہاکہ واپڈاڈیرہ کودس دن کی مہلت دینے کے باوجودانہوں نے اپنے اصلاح احوال کیلئے کچھ نہ کیا۔تنگ آمدبجنگ آمدآج تاجربرادری اپناکاروبارزندگی معطل ہونے اورعوام کے دکھ دردکودیکھتے ہوئے احتجاج پرمجبورہے۔انہوں نے حکومت وقت کے نمائندوں‘ضلعی انتظامیہ کی مسلسل چشم پوشی اورمجرمانہ غفلت پربھی افسوس کااظہارکرتے ہوئے کہاکہ عوامی اورقومی اسمبلی کے نمائندوں کوسانپ سونگھ گیاہے۔وہ مفادات کی خاطراپنی عوام کودربدرکی ٹھوکرکھانے پرمجبورکررہے ہیں۔تین سال سے ہمارے ایم این اے کی لوگوں نے شکل تک نہیں دیکھی۔گیس کے ترقیاتی کام ٹھپ ہیں۔گنے کے زمینداروں کوادائیگیاں نہیں کی جارہیں۔واپڈاکے ظلم وستم انتہائی درجے کوچھورہاہے۔سردی کے دنوں میں بارہ سے اٹھارہ گھنٹے کی لوڈشیڈنگ ہوتی رہی۔گرمیوں میں کیاحال ہوگااسکاتصورکرکے بھی روح کانپتی ہے۔مقررین نے کہاکہ اگرناجائزلوڈشیڈنگ حسب وعدہ ایس ای واپڈابنوں سرکل عابدخان جوانہوں نے کل مرکزی تاجران کیساتھ مذاکرات میں کیالوڈشیڈنگ کے دورانیے کوکم نہیں کیاجاتابھتہ خوری اوراوورریڈنگ ختم نہیں کی جاتی۔ناجائزجرمانوں کے سلسلے کونہیں روکاجاتاتوآج کامظاہرہ جوپرامن ہے کل کواس کی امن کی کوئی گارنٹی نہیں دی جاسکتی۔اصلاح احوال نہ ہونے کی صورت میں ڈیرہ کے تاجران اورعوام کااگلامظاہرہ اوردھرناواپڈادفترکے سامنے ہوگا۔جسکی تمام ترذمہ داری واپڈاکے ارباب اختیار‘عوامی نمائندوں اورضلعی انتظامیہ پرہوگی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -