پنجاب اسمبلی نے شادی بیاہ تقریبات کا ترمیمی بل منظور کر لیا

پنجاب اسمبلی نے شادی بیاہ تقریبات کا ترمیمی بل منظور کر لیا
پنجاب اسمبلی نے شادی بیاہ تقریبات کا ترمیمی بل منظور کر لیا

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب اسمبلی نے’’مسودہ قانون شادی بیاہ تقریبات 2015‘‘ کا ترمیمی بل منظور کر لیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے  مطابق اسمبلی اجلاس کے دوران سٹینڈنگ کمیٹی نے شادی بیاہ کی تقریبات کے بل میں ترامیم کرنے کی سفارشات پیش کی جن میں کہا گیا ہے کہ شادی کے موقع پر جہیز دکھانے پر پابندی لگائی جائے جبکہ گھر کے اندر شادی بیاہ پر آئے مہمانوں کو ایک سے زائد ڈش کھلانے کی اجازت ختم کی جائے۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

سفارشات میں مزید کہا گیا ہے کہ شادی کے موقع پر دولہا یا دلہن کے گھر والوں کی جانب سے گھر کے علاوہ محلے میں چراغاں کرنے پربھی پابندی لگائی جائے اور اونچی آواز میں گانے چلانے پر بھی پابندی عائد کی جائے ۔اس کے علاوہ تقریبات کے دوران نمود و نمائش والی رسومات پر پابندی، مہندی، ولیمہ یا بارات پر ون ڈش دینے کی تجویز بھی پیش کی گئی ہے ۔ سٹینڈنگ کمیٹی نے سفارش دی ہے کہ گھر کے اندر بھی شادی کی تقریبات رات 10بجے سے پہلے ختم کر دی جائیں اور پارکس اور دیگر پبلک مقامات پر لائٹنگ کے رواج کو بھی ختم کیا جائے ۔

سفارشات میں کہا گیا ہے کہ شا دی بیاہ کے بل کی خلاف ورزی پر ایک ماہ قید کی سزا کے علاوہ 50ہزارسے20 لاکھ روپے تک جرمانہ عائد کیا جائے تاہم اسمبلی نے مسودہ قانون شادی بیاہ تقریبات 2015منظور کر لیا ہے۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں۔

مزید :

لاہور -