چھوٹو گینگ کیخلاف آپریشن کی ناکامی کی وجوہات منظر عام پر آگئیں ، 3 روز سے اہلکاروں کو کھانا ہی نہیں دیا گیا

چھوٹو گینگ کیخلاف آپریشن کی ناکامی کی وجوہات منظر عام پر آگئیں ، 3 روز سے ...
چھوٹو گینگ کیخلاف آپریشن کی ناکامی کی وجوہات منظر عام پر آگئیں ، 3 روز سے اہلکاروں کو کھانا ہی نہیں دیا گیا

  


راجن پور(مانیٹرنگ ڈیسک) کچے کے علاقے میں سکیورٹی فورسز کا چھوٹو گینگ کے خلاف آپریشن مسلسل ناکامی کا شکار ہے اور 12 روز گزرنے کے باوجود بھی ڈاکووں کو قابو نہیں کیا جاسکا ہے۔ پنجاب پولیس کی ناقص حکمت عملی کی وجہ سے 6 پولیس اہلکار شہید جبکہ 6زخمی اور 20 یرغمال ہوچکے ہیں تاہم اب اس ناکامی کی وجوہات منظر عام پر آگئی ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق آپریشن میں اگلے محاذ پر لڑنے والے پولیس اہلکار اعلیٰ حکام کے خلاف پھٹ پڑے۔ اہلکاروں کا کہنا تھا کہ ناقص حکمت عملی کے ساتھ آپریشن شروع کیا گیا جس کی وجہ سے اتنے جوانوں کی قربانی دینی پڑی۔ انہوں نے بتایا کہ پولیس اہلکاروں کو مطلوبہ مقدار میں اسلحہ فراہم نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے اہلکار کچا جمال پہنچے تو ان کے پاس گولیاں ختم ہوگئیں جبکہ انہیں کمک بھی نہیں دی گئی جس پر ڈاکووں نے بہت سے اہلکاروں کو شہید کردیا اور متعدد کو یرغمال بنالیا۔ 3 روز سے کھانے کیلئے بھی کچھ نہیں دیا گیا بھوک سے نڈھال اہلکار نے کچا جمال جانے سے نکار کیا تو حکام نے اسے نوکری سے برخاست کرنے کی دھمکی دی۔

مزید : راجن پور /اہم خبریں