میو ہسپتال کے 5دروازے مریضوں پر بند ، باہر دکانیں سج گئیں

میو ہسپتال کے 5دروازے مریضوں پر بند ، باہر دکانیں سج گئیں

  

 لاہور (جاوید اقبال) ملک میں سب سے قدیم اور بڑے مرکزی میو ہسپتال کے 5 بڑے داخلی دروازے بند کردیئے گئے ہیں جس سے میو ہسپتال ’’قید خانے‘‘ میں تبدیل ہوگیا ہے، گیٹ بند ہونے سے میو ہسپتال روڈ اور دھنی رام روڈ تجاوزات کی نرسریوں میں تبدیل ہوگیا ہے، گیٹوں کے باہر بازار کے اندر بازار لگائے گئے ہیں، دروازے سکیورٹی اداروں کی طرف سے دہشت گردوں کی دھمکیوں پر بند کرائے گئے، میو ہسپتال کے داخلی اور خارجی 6 دروازے ہیں جن میں سے 5 بند کرادیے گئے ہیں جبکہ روزانہ سینکڑوں لوگ جو میو ہسپتال آتے جاتے ہیں ان کے لئے داخلی اور خارجی راستہ انارکلی کی طرف سے دیا گیا ہے جہاں 24 گھنٹے ٹریفک بلاک رہتی ہے اور نازک حال مریض بھی ٹریفک میں پھنسے رہتے ہیں اور اب تک داخلی دروازے پر ٹریفک بلاک ہے، پھنسے رہنے سے ہر وقت ہسپتال نہ لیجائے جانے کے باعث درجنوں مریض موت کی وادی میں جاچکے ہیں، ہسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ 5 دروازے سکیورٹی اداروں کی طرف سے ملنے والی سخت واررنگ کے بعد بند کیے گئے ان دروازوں کی بندش کا سب سے بڑا نقصان ہسپتال کے باہر واقع ہسپتال روڈ پر فارمیسیوں کو ہوا ہے جہاں مریض دوائی لینے نہیں جاسکتے اور ان کا کاروبار تباہ ہوگیاہے، کھانے پینے کے لئے ہسپتال میں بنائی گئی کینٹینوں کی چاندی ہوگئی ہے بتایا گیا ہے کہ میو ہسپتال کی انتظامیہ نے سکیورٹی کی آڑ میں ہسپتال روڈ پر واقع 5 داخلی اور خارجی دروازے بند کردیئے ہیں، آؤٹ ڈور ایمرجنسی گورا وارڈ اور آئی وارڈ کے مین گیٹوں کو تالے لگا دیئے گئے ہیں۔ انار کلی کی طرف سے آنے والے مریض دھنی رام روڈ پر گیٹ استعمال کرتے تھے اس گیٹ کو بھی مستقل تالہ لگا دیا گیا ہے اور ہسپتال آنے جانے کیلئے واحد راستہ انارکلی استعمال کرایا جارہاہے۔ دروازے بند کرکے مریضوں اور ان کے لواحقین کو ہسپتال پر قید کردیا گیا ہے۔ مریض کھانے پینے کے لئے اشیاء کی خریداری کے لئے ہسپتال کی کینٹینوں کے رحم و کرم پر ہیں جو مہنگی اشیاء فروخت کرکے مریضوں اور ان کے لواحقین کو دونوں ہاتھوں سے لوٹ رہے ہیں۔اس حوالے سے ہسپتال کے باہر واقع فارمیسیوں کے مالکان شیخ مظہر، محمود شیخ، جہانگیر خان، مشیر احمد نے ’’پاکستان‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ انتظامیہ نے ہسپتال کے اندر واقع کینٹینوں اور فارمیسی کے مالکان کو آباد کرنے کیلئے دروازے بند کیے ہیں ایسا ہونے سے وہ آباد اورہم بے آباد ہوگئے ہیں، کروڑوں کا کاروبار تباہ ہوگیا ہے جبکہ ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر عامر خلیل سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ سکیورٹی اداروں کی وارننگ پر گیٹ بند کیے ہیں، اگر دروازوں کے باہر لوگ قبضے کرکے تجاوزات قائم کیے ہوئے ہیں تو ان کے خلاف ضلعی انتظامیہ کارروائی کرے ہمارا کوئی حق ہے نہ تعلق۔ ہسپتال کے باہر فارمیسی مافیا آئے روز کوئی نہ کوئی ایشو کھڑا کردیتی ہے۔ وہ چاہتے ہیں کہ گیٹ کھل جائیں مگر جب تک سکیورٹی ادارے گیٹ کھولنے کی اجازت نہیں دیتے ہم گیٹ بند رکھیں گے۔ داخلی اور خارجی راستہ کے لئے ایک گیٹ کھولا گیا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -