حکمرانوں کی ہٹ دھرمی اور قرضوں نے ملک کو اندھیروں میں ڈبورکھا ہے،ذکر اللہ

حکمرانوں کی ہٹ دھرمی اور قرضوں نے ملک کو اندھیروں میں ڈبورکھا ہے،ذکر اللہ

  

لاہور (ایجوکیشن رپورٹر ) امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ حکومت بجلی کے بلوں پر علیحدہ علیحدہ ٹیکسوں کے خانے بنا کر عوام کو مطمئن کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔حکمرانوں کی ہٹ دھرمی اور آئی ایم ایف کے قرضوں نے ملک کو اندھیروں میں ڈبورکھا ہے۔ ان خیالات کااظہار گذشتہ روز انہوں نے اپنے بیان میں کیا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ وزیرا علیٰ پنجاب نے انتخابات سے قبل عوام سے وعدے کئے تھے کہ و ہ بجلی کی لوڈشیڈنگ کو سالوں میں نہیں بلکہ مہینوں میں ختم کردیں گے ۔حکمرانوں کے جھوٹے دعوے عوام کو مزید بے وقوف نہیں بنا سکتے ۔انہوں نے کہا کہ موجودہ صورتحال میں بدترین لوڈشیڈنگ نے لوگوں کی زندگی اجیرن بنادی ہے۔ شہری سراپا احتجاج بن گئے ہیں۔ دیہاتوں اور شہروں میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ رکنے کا نام نہیں لے رہا ۔پنجاب بھر کے شہری علاقوں میں 10سے 12گھنٹے جبکہ دیہاتوں میں 15سے 18گھنٹے تک کی غیر علانیہ لوڈشیڈنگ کی جا رہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ملک میں جاری توانائی بحران کے باعث ملکی معیشت بری طرح متاثر ہو چکی ہے اور حکومت کے پاس توانائی کے بحران سے باہر نکلنے اور اپنے پاؤں پر کھڑا ہونے کے لیے کو ئی واضح منصوبہ نہیں ہے۔انہوں نے کہاکہ عوام کو کب تک اس قسم کی کا غذی کاروائیوں کے ذریعے لوٹنے کا سلسلہ جاری رہے گا۔ واپڈا عوام کو خراب میٹرز کے بہانے بھاری جرمانے ڈال کر ذلیل کر رہا ہے ۔میٹروں کا تیز چلنا، میٹر ریڈر کا اضافی یونٹس ڈالنا ۔پرانے میٹر اُتارکر نئے میٹرز لگانے کے لیے عوام سے رشوت لینا یہ سارے ذریعے عوام کو لوٹنے اور ذلیل کرنے کے لیے استعمال کیے جاتے ہیں اور واپڈا کے عملے کا عوام کے ساتھ رویہ قابل افسوس اور تکلیف دہ ہوتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت اور حکومتی ادارے عوام کے ساتھ روا رکھے

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -