زراعت کو صوبے میں صنعت کا درجہ حاصل ہے،عبد الکریم خان

زراعت کو صوبے میں صنعت کا درجہ حاصل ہے،عبد الکریم خان

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے معاون خصوصی برائے صنعت عبد الکریم خان نے زراعت کے شعبہ میں پرائیویٹ سیکٹر کی اہمیت کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ صوبے میں زراعت کی ترقی کے ساتھ ساتھ جدید اور معیاری تخم کی پیداوار کیلئے موثر اقدامات اٹھائے جائیں اور سی پیک سے بھر پور استفادہ کیلئے خیبر پختونخوا اکنامک زون ڈیویلپمنٹ منیجمنٹ کمپنی کو صوبے میں سیڈز ایسوسی ایشن کی جانب سے لائحہ عمل کے بارے میں آگاہ کیا جائے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کے روز سیڈز ایسوسی ایشن خیبر پختونخوا کے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر ایڈیشنل سیکرٹری صنعت جنت گل ، ڈپٹی سیکرٹری صنعت ، ڈپٹی ڈائریکٹر صنعت اور دیگر افسران بھی موجود تھے۔اجلاس کے دوران صوبے میں سیڈز سے وابستہ افراد کو درپیش مسائل اور صوبے کی زرعی پیداوار میں اضافہ کرنے کے علاوہ زراعت کو مکمل طور پر صنعت کا درجہ دینے کے حوالے سے غور و خوض کیا گیا اور پاک چائنہ اقتصادی راہداری کیلئے حکمت عملی وضع کرنے کے سلسلے میں بھی اہم فیصلے کئے گئے۔معاون خصوصی نے کہا کہ محکمہ صنعت اور خیبر پختونخوا اکنامک زون ڈیویلپمنٹ منیجمنٹ کمپنی کو چاہئیے کہ وہ صوبے میں زراعت کے شعبے کی اہمیت کو مد نظر رکھتے ہوئے ایک ایسی پالیسی مرتب کریں جس میں پھلوں اور سبزیوں کی گریڈنگ ہو تاکہ اس کے براہ راست فوائد کسانوں کو مل سکیں۔انہوں نے کہا کہ زراعت کوصوبے میں صنعت کا درجہ حاصل ہے کیونکہ 80فیصد آبادی کا انحصار زراعت سے وابستہ ہے اسلئے حکومت دیگر شعبوں کی طرح زراعت کے شعبے پر بھی خصوصی توجہ مرکوز کئے ہوئے ہے۔انہوں نے سیڈز میں سرمایہ کاری کرنے کے خواہشمند تاجروں سے کہا کہ حکومت صوبے میں صنعت کاری کرنے والوں کو بجلی کی مد میں رعایت دینے اور صنعتی پلاٹوں کی خریداری کی قیمتوں میں کمی کرنے کے علاوہ صنعتی مشینری لانے میں کرائے کی ادائیگی میں بھی مدد کرے گی۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -