بونیر ،25 اپریل کو ضلع بھر میں خانہ ومردم شماری کے انعقاد کیلئے اجلاس کا انعقاد

بونیر ،25 اپریل کو ضلع بھر میں خانہ ومردم شماری کے انعقاد کیلئے اجلاس کا ...

  

بونیر (ڈسٹرکٹ رپورٹر) اس ماہ کے 25 تاریخ سے ضلع بھر میں شروع کی جانے والی خانہ شماری و مردم شماری کے لئے پلان کو ختمی شکل دینے کے لیے اعلیٰ سطح کا اجلاس ڈی سی ظریف المعانی کی صدارت میں منعقد ہوا۔جس میں ضلع ناظم ڈاکٹر عبیداللہ خان،پاک فوج کے میجر حسن،ڈی پی او محمد ارشاد خان یوسفزئی ،ای ڈی او،مردم شماری عملہ کے افسران اور چارون تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنران نے شرکت کی۔اجلاس میں بریفنگ دیتے ہوئے زمدار افسران نے بتایا ہے کہ مھم کے پہلے مرحلے میں تین دن تک خانہ شماری کے نمبر لگائے جائنگے اور بعد میں ایک دن رہ جانے والوں کو بھی کور کیا جائے گا جبکہ اندراج فھرست کے لئے اگلے دس دن کام کیا جائے گا اور اس ٹیم میں ایک نومینیٹر، دو پولیس اھلاکار اور دو فوجی جوان شامل ہونگے۔انھوں نے بتایا ہی کہ مھم کے لیے کل 374 مرد اساتذہ کو ٹیننگ دی گئی ہے جن میں 272خدمات انجام دینگے جبکہ باقیماندہ ریزرو فورس کے طور پر تیار رہیں گے۔انھوں نے مذید بتایا ہے کہ ٹیموں کو مقررہ مقام تک پہچانے کے لیے گاڑیوں کا بندوبست کیا جارہاہے اورانکو باقاعدہ نصف ادائیگی پیشگی اور نصف بعد میں کیا جائیگا اس مقصد کے لیے فنڈز متعلقہ اداروں کو منتقل کیا گیا ہے اور پورے بونیر کو 544بلاک اور 59سرکلز میں تقسیم کیا گیاہے۔ڈی سی بونیر نے ھدایات دی ہیں کہ ٹیم کو کھانے پیینے کے لیے بھی بندوبست موجود گا لیکن ولیج سیکریٹریزگائد اور ولیج ناظمین میزبانی کے فرائض انجام دینگے اور سرکاری افسران ولیجلنٹ ٹیم کے طور پر کام کرییں گے۔انھوں نے عوام سے خانہ و مردم شماری کے لئے انے والی ٹیموں سے تعاون اور حسن سلوک کی اپیل کی ہے۔اس موقع پر ڈی پی او بونیر نے سیکورٹی کے خوالہ سے بتایا کہ بونیر کے تین ایف سی پلاٹون کئی عرصہ سے بونیر سے باہر ڈیوٹی پر تعینات ہے اگر کسی ان ایف سی پلاٹون کو بونیر واپس کیا جائے تو پولیس کی نفری کی کمی کا مسئلہ حل ہو جائے گا ،انہوں نے کہا کہ مردم شماری کے ٹیموں کو بہتر سیکورٹی کو یقینی بنایا جائے گا اور اس میں کو ئی کوتا ہی برداشت نہیں کی جائے گی ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -