انصاف کی جلد فراہمی کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ،ہائی کورٹ میں 41سال پرانا کیس نکل آیا

انصاف کی جلد فراہمی کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ،ہائی کورٹ میں 41سال پرانا کیس ...
انصاف کی جلد فراہمی کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ،ہائی کورٹ میں 41سال پرانا کیس نکل آیا

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ میں والٹن ایئرپورٹ کی اراضی سے متعلق 41سال پرانے مقدمے کے زیر التواءہونے کا انکشاف ہوا ہے جوانصاف کی جلد فراہمی کے لئے عدلیہ کی کوششوں پر ایک سوالیہ نشان ہے۔

عوام کے الیکٹرک کے جن کوبوتل میں بندکرکے دم لیں گے،مسئلہ حل نہ کیاتو 22 اپریل کوگورنرہاوس پہنچیں گے:حافظ نعیم الرحمان

جسٹس عباد الرحمن لودھی کے روبرو اشفاق احمد بنام سول ایوی ایشن اتھارٹی کا مقدمہ زیر سماعت آیا تو وکلاءکی طرف سے فاضل جج کو بتایا گیا کہ یہ مقدمہ والٹن ایئرپورٹ کی لینڈ ایکوزیشن سے متعلق ہے جو 1976 سے لاہور ہائیکورٹ میں زیر سماعت ہے لیکن آج تک اس پر کوئی فیصلہ نہیں ہو سکا، عدالتی استفسار پر وکلاءنے بتایا کہ ماضی میں بیشتر جج صاحبان نے اس کیس کی آدھی سے زیادہ سماعت تو کی لیکن فیصلہ نہیں سنایا گیا، درخواست گزاروں کے وکلاءنے بتایا کہ والٹن ایئرپورٹ کے لئے اراضی ایکوائر کی گئی ہے اور درخواست گزاروں کے آباﺅ اجداد نے معاوضہ بھی وصول کر لیا .

حکومت اب اپنا معاوضہ واپس لے اور درخواست گزاروں کو اراضی واپس کرے، وفاقی حکومت کی طرف سے اسٹنٹ اٹارنی جنرل حنا حفیظ اللہ خان نے موقف اختیار کیا کہ جو اراضی کے مالکان تھے، انہوں نے معاوضہ لے لیا، جس مقصد کے لئے اراضی ایکوائر کی گئی تھی، وہ بھی پورا ہو گیا ،یہ درخواستیں ناقابل سماعت قرار دے کر خارج کی جائیں، فاضل جج نے مختصر سماعت کے بعد ریمارکس دیئے کہ حیرانی کی بات کہ معمولی سے قانونی نقطے پر 41برس سے فیصلہ نہیں ہو سکا، عدالت نے کیس کی مزید سماعت 17اپریل تک ملتوی کرتے ہوئے حکم دیا کہ آئندہ روزانہ کی بنیاد پر اس کیس کی سماعت ہوگی۔

مزید :

لاہور -