گریٹر اقبال پارک میں جماعت اسلامی کے کسی کارکن نے توڑ پھوڑ نہیں کی، ذکر اللہ مجاہد

گریٹر اقبال پارک میں جماعت اسلامی کے کسی کارکن نے توڑ پھوڑ نہیں کی، ذکر اللہ ...

لاہور ( ایجوکیشن رپورٹر) امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ گریٹر اقبال پارک کی انتظامیہ کے اس کو موقف کو کہ 8 اپریل کو مینار پاکستان پر ہونے والے یوتھ کنونشن میں جماعت اسلا می کے ورکرز نے گریٹر اقبال پارک میں توڑ پھوڑ اور قومی املاک کو نقصان پہنچایا اس الزام کو یکسر مسترد کرتے ہیں ۔ کسی دوسری پارٹی نے مینار پاکستان پر جلسہ میں اگر توڑ پھوڑ اور قومی املاک کو نقصان پہنچایا ہے تو جماعت اسلامی اس کی ذمہ دار نہیں۔ان خیالات کا اظہار گذشتہ روز انہوں نے اخبارات میں چھپنے والے ڈی جی پی ایچ اے کے موقف کے جواب میں اپنے بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی پاکستان کی ایک منظم جماعت ہے جو آئین اور قانون کی پاسداری پر یقین رکھتی ہے اورمینار پاکستان اور گریٹر اقبال پارک کو قومی ورثہ اور اثاثہ سمجھتی ہے اس کو نقصان پہنچانے کا جماعت اسلامی سوچ بھی نہیں سکتی جبکہ ہم قومی املاک کی حفاظت کو اپنی جان سے بھی زیادہ عزیز سمجھتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ملکی تاریخ شاید ہے کہ جماعت اسلامی نے بڑے بڑے پروگرامات کا انعقاد ملک کی تاریخی جگہوں پر کیا ہے جن میں مینار پاکستان گراؤنڈ بھی شامل ہے لیکن کبھی بھی کسی کارکن نے کسی سرکاری اور پرائیویٹ املاک کو نقصان نہیں پہنچایا اور پرامن شہر ی ہونے کا ثبوت دیا ہے ۔ ڈی جی پی ایچ اے نے غلط بیانی سے کام لیتے ہوئے ایک سازش کے تحت جماعت اسلامی کی ساکھ کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی ہے ہم اس کی بھر پور مذمت کرتے ہیں اور پنجاب حکومت اور انتظامیہ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ سی سی ٹی وی فوٹیج کو دیکھا جائے اور نقصان پہنچانے والے افراد کی نشان دہی کی جائے ۔ انتظامیہ سب کو ایک ہی لاٹھی سے ہانکنے کی کوشش نہ کرے ۔تاریخ اس بات کی گواہ ہے کہ ماضی میں بھی مینار پاکستان پر لاکھوں لوگوں کے اجتماع کے بعد بھی گراؤنڈ کوبہتر حالت میں واپس کیا گیا ہے۔ذکر اللہ مجاہد نے مزید کہا کہ ہم اس بات کوکبھی بھی قبول نہیں کریں گے

مزید : میٹروپولیٹن 1