مشرف کو کٹہرے میں لانے کیلئے سپریم کورٹ ازخود نوٹس لے، کیپٹن(ر) صفدر

مشرف کو کٹہرے میں لانے کیلئے سپریم کورٹ ازخود نوٹس لے، کیپٹن(ر) صفدر

اسلام آباد (این این آئی) مسلم لیگ (ن) کے رکن قومی اسمبلی کیپٹن (ر) محمد صفدر نے مطالبہ کیا ہے کہ 1973ء کا آئین توڑنے والے سابق صدر پرویز مشرف کو عدالتی کٹہرے میں لانے کیلئے سپریم کورٹ ازخود نوٹس لے۔ قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمارے لئے اعزاز کی بات ہے کہ مسلم لیگ (ن) میں ایسے رکن موجود ہیں جنہوں نے 1973ء کا متفقہ آئین دیا۔ متنازعہ فیصلوں سے ریاست کو نقصان اٹھانا پڑا۔ قرارداد مقاصد اس آئین کا حصہ ہے اور ہر قسم کے شہری حقوق کے تحفظ کا ضامن ہے، یہ آئین‘ ریاست‘ پارلیمنٹ اور جمہوریت کے تحفظ کے ساتھ ساتھ عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کا بھی ضامن ہے۔ جسٹس منیر کے متنازعہ فیصلے کے بعد ملک کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا، یہ آئین تین دفعہ ٹوٹا مگر عدالتوں نے کوئی کردار ادا نہیں کیا، آئین میں تحفظ کا آرٹیکل بھی موجود ہے۔بعد ازاں قومی اسمبلی کااجلاس غیر معینہ مدت تک کیلئے ملتوی کر دیا گیا ٗقومی اسمبلی کا اجلاس جاری تھا کہ اس دوران ڈاکٹر شیریں مزاری نے ایوان میں کورم کی نشاندہی کردی۔ سپیکر نے گنتی کا حکم دیا۔ ارکان کی مطلوبہ تعداد پوری نہ نکلنے پر کورم پورا ہونے تک ایوان کی کارروائی ملتوی کردی گئی۔ کچھ دیر بعد اجلاس کی کارروائی دوبارہ ڈپٹی سپیکر مرتضیٰ جاوید عباسی کی زیر صدارت شروع ہوئی تو سپیکر نے گنتی کا حکم دیا۔ ارکان کی مطلوبہ تعداد پوری نہ نکلنے پر سپیکر نے قومی اسمبلی کا اجلاس غیر معینہ مدت تک کے لئے ملتوی کردیا۔

کیپٹن صفدر

مزید : علاقائی