پسماندہ علاقہ کے طالبعلم جان پر کھیل کر علم کی پیاس بجھانے پر مجبور

پسماندہ علاقہ کے طالبعلم جان پر کھیل کر علم کی پیاس بجھانے پر مجبور

راجن پور (ڈسٹر کٹ رپورٹر)حکو مت پنجاب جہاں اربوں روپے میٹرو اسٹیشنز ،اورنج ٹرین جیسے بھاری مالیت کے منصو بوں پر خرچ کررہی ہے وہاں جنو بی پنجاب کے پسماندہ اضلاع(بقیہ نمبر33صفحہ12پر )

کے مکین آج کے جدید دور میں بنیادی سہولیات سے محروم ہیں کہیں انسان اور جانور اکٹھے پانی پیتے ہیں تو کہیں ہسپتالوں میں ادویات نہ ملنے اور عملہ کی عدم دستیابی سے شہری دم توڑ جاتے ہیں ،کہیں آمدروفت نہ ہونے سے شہری مشکلات سے دوچار ہیں ایسا ہی ایک گاؤں چک پیرووالا میں موجود ہے اس گاؤں کے بچے پڑھنا چاہتے ہیں مگر سکول جانے کیلئے واحد راستہ نہر کوعبور کر کے جانا پڑتا ہے پُل نہ ہو نے کے باعث بچے پا نی کی پائپ لائن کے پائپ پر چڑھ کر روزانہ سکول پہنچتے ہیں کبھی بچے نہر میں گر پڑتے ہیں اور کبھی اُن کی کتابیں نہر میں گر کر گیلی ہو جاتی ہیں علاقہ مکینوں نے احتجاج کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ ڈپٹی سپیکر سردار شیرعلی گورچا نی کو کہہ کہہ کر تھک گئے مگر نوسالہ اقتدار میں ان کے علاقہ میں پُل تعمیر نہ ہوسکی اب ڈیڑھ سال سے بلدیاتی اِدارے ضلع کو نسل معرض وجود میں آئی مگر پھر بھی اُن کے علاقہ کا یہ مسئلہ حل نہ ہوا اُنہوں نے وزیراعلیٰ پنجاب سے اس مسئلہ کے فوری حل کا مطالبہ کیا ہے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر