خیبرایجنسی، لنڈی کوتل بازار میں نیشنل لاجسٹک سیل کیخلاف مظاہرہ

خیبرایجنسی، لنڈی کوتل بازار میں نیشنل لاجسٹک سیل کیخلاف مظاہرہ

خیبر ایجنسی (بیورورپورٹ)لنڈیکوتل بازار باچاخان چوک میں نیشنل لاجسٹک سیل کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ہوا مظاہرین نے باچاخان چوک سے پریس کلب تک احتجاجی واک بھی کیا مظاہرین نے کالے جھنڈے اٹھا رکھے اور این ایل سی کے خلا ف شدید نعرہ بازی کی مظاہرین سے خطاب کر تے ہوئے زرقیب شنواری ،عبدلرازق شنواری،شاہ رحمان شنواری،زکریا شنواری ،لطف اللہ شنواری ،برکت اللہ اور ذوالفقار کہا کہ خوگا خیل قوم کا جو معاہدہ این ایل سی کے ساتھ جون2015میں ہواتھا وہ قوم کو قبول ہیں اسکے بعد تمام معاہدوں کو قوم مسترد کر تی ہیں اور چھ مشران کے ساتھ کئے گئے معاہدوں کو قوم تسلیم نہیں کرتے انہوں نے کہا کہ طورخم میں این ایل سی میں کاروبار کیلئے آیا ہیں جبکہ مقامی لوگوں کا روبار تباہ کیا اور لوگوں سے روزگا رچھین لیا جا رہا ہیں انہوں نے کہا کہ نیشنل لاجسٹک سیل حکام نے طورخم میں خوگا خیل شنواری قوم کے سینکڑوں ایکڑ اراضی پر غاصبانہ قبضہ کیا ہے جس کی پرزور مذمت اور قبضہ چھوڑنے کا مطالبہ کرتے ہیں مقررین نے کہاکہ طورخم بازار سے این ایل سی عملہ نے ٹیکسی سٹینڈ کے خاتمے کا فیصلہ کیا ہے این ایل سی کے اس فیصلے سے ہزاروں شہری بے روزگار ہوجائیں گے انہوں نے کہا کہ اگر این ایل سی نے طورخم بازار میں مقامی قبائل کے زمین پر قبضہ برقرار رکھا اور ٹیکسی سٹینڈ کے خاتمے کا فیصلہ واپس نہ لیا تو اگلے ہفتہ پشاور گورنر ہاوس کے سامنے احتجاج کریں گے مقررین نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ پاک افغان شاہراہ پر قائم چیک پوسٹوں کی سیکورٹی ذمہ داری لیویز فورس کے سپرد کیا جائے اور جگہ جگہ پر شناختی کارڈ چیک کرنے پر روکنا اور تلاشی بند کیا جائے

مزید : پشاورصفحہ آخر