قبائلی طا لب علم میڈیکل کالج کی ایڈمشن کمیٹی کی غفلت کی بھینٹ چڑھ گیا

قبائلی طا لب علم میڈیکل کالج کی ایڈمشن کمیٹی کی غفلت کی بھینٹ چڑھ گیا

خیبر ایجنسی (بیوروپورٹ)قبائلی طا لب علم میڈیکل کالج کی ایڈمشن کمیٹی کی غفلت کی بھینٹ چڑھ گیاعدالت نے انکو ائری کا حکم دیا تھا توداخلہ کمیٹی نے اپنی کو تاہی چھپائی ،اویس آفریدی کا میڈیا سے بات چیت میڈیکل کالج میں داخلے سے محروم طالب علم اویس آفریدی نے چیف جسٹس آف پاکستان وپشاور ہائی کورٹ ،پاکستان تحریک انصاف کے چئیر مین عمران خان اور وزیر اعلی پر ویز خٹک سے اپیل کرتے ہو ئے کہا کہ خیبر پختو انخواکے میڈیکل کالجزکے داخلے برا ئے سال 2017-18 کے دوران داخلہ فارم میں میر ی معمولی سی بھو ل کو جو ائنٹ ایڈمیشن کمیٹی نے جو از بنا کر داخلہ نہیں دیا گیا اس کے باوجود کے میرٹ لسٹ میں خیبر ایجنسی کی 16مخصوص نشستو ں میں سے 15ویں نمبر پر تھا لیکن میڈیکل کالج میں میں داخلہ نہیں دیا گیا طالب علم نے کہا کہ صوبائی حکومت کی منظو ر شدہ پالیسی برائے میڈیکل کالجز 2017-18 کے سب پر بلا تفریق اور من وعن اطلاق نہ ہو نے کے خلاف میں نے انصاف کے حصول کے لئے عدالتی دروازہ کھٹکٹھا یا جس کی رو سے مذکو رہ داخلہ کمیٹی کو میر ٹ اور پا لیسی کے عین مطا بق انکو ائر ی کا حکم صادر ہو ا۔لیکن انکوائر ی میں مزکو رہ داخلہ کمیٹی نے اپنی بے ضابطگی پر دوبارہ پر دہ ڈالا اورٹھو س شواہد پالیسی اور عدالتی حکم کے باو جو د مجھے انصاف نہیں ملا اور ایو ب میڈیکل کا لج میں داخلے سے محر وم کر کے انصاف کی دھجیا ں اڑ دی گئی داخلہ کمیٹی کی زمہ داری ہے کہ پا لیسی کے مطا بق صاف وشفاف کا روائی کر تی لیکن ان کی مسلسل غفلت نہ ہما رے لئے لمحہ فکر یہ ہے بلکہ اس کے سبب میر امستقبل تاریک ہو نے کا اندیشہ ہے

مزید : پشاورصفحہ آخر