عوام کے مال وجان کی حفاظت اور دکھی انسانیت کی خدمت اولین ترجیح ہے ،ڈاکٹر میر عالم خان

عوام کے مال وجان کی حفاظت اور دکھی انسانیت کی خدمت اولین ترجیح ہے ،ڈاکٹر میر ...

نوشہرہ(بیورورپورٹ) ریسیکو نوشہرہ 1122 کے ضلعی آفیسر ڈاکٹر میر عالم خان نے کہا ہے کہ عوام کے جان ومال کی حفاظت اور دکھی انسانیت کی خدمت ہمارا اولین مشن ہے ریسیکو 1122 کو جدید خطوط پرا ستوار کرنے کیلئے عملی اقدامات اٹھائے گئے ہیں عوام بلاجواز اور غیر ضروری فون کالز سے گریز کریں جس سے بعض اوقات ضروری ایمرجنسی کال پر بھی باور نہیں رہتا پبی اکوڑہ اور جہانگیرہ میں بھی ریسیکو پوائنٹس قائم کئے گئے ہیں دریائے کابل پر سیروتفریح کیلئے آنے والے سیاح اور کشتی چلانے والے ملاح لائف سیونگ جیکٹ کے استعمال کو یقینی بنائیں ان خیالات کااظہارانہوں نے اپنے دفتر میں میڈیا کو 1122 بارے بریفنگ دیتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ جب سے ریسیکو 1122 قائم ہوا ضلع بھر کے عوام کو تحفظ کی فراہمی کو یقینی بنایا گیا ہے ہماری خواہش ہے کہ ضلع نوشہرہ کے غریب عوام کی بلامعاوضہ خدمت کرسکے اس میں غریب خواتین کے ڈیلوری کیسز کیلئے بھی ایمولینس فراہم کی جاتی ہے انہوں نے کہا کہ ایمرجنسی کال کے سننے کے فورا بعد ریسیکو ایمرجنسی سروس کی گاڑیاں جن میں ایمبولینس اور فائربریگیڈ کی گاڑیاں شامل ہیں انہوں نے کہا کہ اب تک 1122 نوشہرہ نے 665 ٹریفک حادثات، آگ بجھانے کے 115، سلینڈر کے پھٹنے کے 1 سمیت دیگر کاروائیوں کے دوران بے شمار قیمتی انسانی جانوں کی ضیائع کوروکا ہے انہوں نے کہا کہ 1122 ایک فعال ادارہ ہے جوکہ عوام کی تحفظ اور حادثات رونما ہونے کی صورت میں اپنی خدمت سرانجام دیتے ہیں ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر میر عالم خان نے وفد کو بتایا کہ ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر خطیر احمد کی سربراہی میں ریسکیو 1122 نے نوشہرہ کے عوام الناس کو 2100 سے زائد ایمرجنسیز کے دوران بروقت اور بہترین سہولیات فراہم کیں. اس دوران 665 ٹریفک حادثات,115 آگ لگنے کے واقعات,1236 میڈیکل, 33 ڈوبنے اور 60 سے زائد مختلف نوعیت کی ایمرجنسیز شامل ہیں. ریسکیو1122 صوبائی حکومت کے تعاون سے فون کال سے لیکر جائے حادثہ پر ابتدائی طبی امداد اور ہسپتال منتقلی تک کے تمام اخراجات خود برداشت کرتی ہے اور دکھی انسانیت کا مداوا کرنے کے لیے یہ تمام تر خدمات مفت فراہم کرتی ہیں. ڈاکٹر میر عالم خان نے کہا کہ ریسکیو1122 عالمی معیار کی مشینری اور آلات سے لیس ہے اور ان کے تمام اہلکار اپنے اپنے شعبے میں مہارت رکھتے ہیں جبکہ ان کی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کو نکھارنے کے لیے باقاعدہ تر بیت فراہم کی جاتی ہے تاکہ عوام الناس کو ترقی یافتہ ممالک جیسی سہولیات احسن طریقے سے فراہم کی جا سکیں.

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...