نیک نیتی کے ساتھ سپریم کورٹ آیا لیکن آج بہت بددل اور دل گرفتہ ہوں: خواجہ سعد رفیق

نیک نیتی کے ساتھ سپریم کورٹ آیا لیکن آج بہت بددل اور دل گرفتہ ہوں: خواجہ سعد ...
نیک نیتی کے ساتھ سپریم کورٹ آیا لیکن آج بہت بددل اور دل گرفتہ ہوں: خواجہ سعد رفیق

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کا کہنا ہے کہ وہ بڑی نیک نیتی کے ساتھ ریلوے پر بات کرنے کیلئے سپریم کورٹ میں آئے ہیں لیکن آج وہ بہت بددل اور دل گرفتہ ہیں، جب عدالت سے شاباش لینے کی بات کی تو مسلم لیگ ن کے ہی لوگوں نے تنقید کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے میڈیا سے بھی شکوہ کیا اور کہا کہ پچھلی بار میڈیا نے وہ کچھ چلایا جو چیف جسٹس نے کہا ہی نہیں تھا۔

سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ ان کی سیاست سے اختلاف کیا جاسکتا ہے لیکن ان کے خاندان کی قربانیوں سے کسی کو انکار نہیں ۔ جتنی بھی سیاست کی ہے اس میں وفاداری تبدیل نہیں کی، میں ضیا الحق کے ساتھیوں میں شامل نہیں ہوں ، جتنی جان تھی وہ ساری ریلوے کے اندر لگائی ہے لیکن آج بہت بد دل اور دل گرفتہ ہوں میرے ساتھ تمام افسران نے دل و جان سے کام کیا ہے ہم عدالت میں بلائے گئے ہیں تو بڑی نیک نیتی کے ساتھ آئے ہیں اور ریلوے پر بات کرنا چاہتے ہیں۔

خواجہ سعد رفیق نے کہا جب انہیں ریلوے کا محکمہ ملا تو 18 ارب روپے کماتا تھا اور ساڑھے 30 ارب کا خسارہ تھا لیکن آج ریلوے 50 ارب کما رہا اور ساڑھے 35 ارب کا خسارہ ہے اگر برانچ لائنوں کے آپریشن بند کردیں تو خسارہ ختم ہوجائے گا۔ انہوں نے اپنے دور میں مال گاڑیاں 12 گنا بڑھادی ہیں ۔محکمہ ریلوے کا 65 فیصد بجٹ پنشنز میں جاتا ہے، ریلوے کے ملازمین 73 ہزار جبکہ پنشنرز کی تعداد ایک لاکھ سے زائد ہے۔

انہوں نے کہا کہ جب انہوں نے یہ بات کہی کہ ’ ہم اپنی کارکردگی پر شاباش لیں گے ‘ تو مسلم لیگ ن کے کئی حامیوں نے بھی تنقید کی لیکن ہم نے بہت خلوص کے ساتھ کام کیا اور تمام بھرتیاں میرٹ پر کیں، آدھی اسمبلی سفارشیں نہ مان کر ناراض کی ہے۔ہم نے ریلوے کو چلادیا ہے لیکن اسے صحیح ہونے میں 10 سے 12 سال لگیں گے، اگر اگلے 10 سال ریلوے انہی خطوط پر چلتا رہا تو یہ ٹھیک ہوجائے گا۔

انہوں نے میڈیا سے بھی شکوہ کیا اور کہا کہ پچھلی بار چینلز نے وہ کچھ چلایا جو چیف جسٹس نے کہا ہی نہیں تھا۔

مزید : اہم خبریں /قومی /سیاست /علاقائی /پنجاب /لاہور