شام پر حملے کا مقصد کیمیائی ہتھیاروں کی صلاحیت ختم کرنا ،کارروائی انتہائی کامیاب رہی: برطانوی وزیر اعظم

شام پر حملے کا مقصد کیمیائی ہتھیاروں کی صلاحیت ختم کرنا ،کارروائی انتہائی ...
شام پر حملے کا مقصد کیمیائی ہتھیاروں کی صلاحیت ختم کرنا ،کارروائی انتہائی کامیاب رہی: برطانوی وزیر اعظم

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) برطانوی وزیر اعظم تھریسامے کا کہنا ہے کہ شامی حکومت کی جانب سے عام شہریوں پر کیمیائی حملے کے ثبوت موجود ہیں، شام پر حملے کا مقصد کیمیائی ہتھیاروں کی صلاحیت ختم کرنا ہے اور حالیہ کارروائی انتہائی کامیاب رہی۔

شام پر امریکہ ، برطانیہ اور فرانس کے مشترکہ میزائل حملے کے بعد نیوز بریفنگ دیتے ہوئے برطانوی وزیر اعظم تھریسامے نے کہا کہ شام کے خلاف کارروائی کامیاب رہی اور مخصوص اہداف کونشانہ بنایاگیا،پوری کوشش کی گئی کہ جانی نقصان سے بچا جائے، شام پر حملے کا مقصد کیمیائی ہتھیاروں کی صلاحیت ختم کرنا ہے، شام پر حملے وہاں جاری خانہ جنگی میں مداخلت نہیں ہیں امید ہے فضائی حملوں سے شام کی کیمیائی ہتھیاروں کی صلاحیت کم ہوگی۔

شام پر امریکی حملے کے بعد بشارالاسد کہاں اور کس حال میں ہیں؟ ویڈ یو منظر عام پر آگئی، دیکھ کر آپ کو بھی اپنی آنکھوں پر یقین نہیں آئے گا

انہوں نے کہا کہ دوما میں کیمیائی حملے شام کے سوا کسی اور نے نہیں کیے ، بشار الاسد نے چار مرتبہ کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا،شامی حکومت کے عوام کے خلاف کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے ثبوت موجود ہیں، شام ہو یا برطانیہ کسی کو کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی اجازت نہیں دے سکتے۔

تھریسامے نے واضح کیا کہ شامی حکومت ان کے عزم کے بارے میں غلط فہمی میں نہ رہے،کیمیائی ہتھیاروں کو ختم کرنا ان کے مفاد میں ہے اور انہیں عام ہتھیارکے طور پر جائز قرار نہیں دیا جاسکتا ۔

انہوں نے کہا کہ شامی حکومت کے خلاف کارروائی درست اور قانونی ہے اور اس حوالے سے وہ پیر کو برطانوی پارلیمنٹ میں بیان دیں گی اور شام میں حملے پر ارکان پارلیمنٹ کاموقف سنیں گے۔

مزید : اہم خبریں /بین الاقوامی