تاریخ میں پہلی مرتبہ قتل ہونے والی نوجوان لڑکی عدالت میں اپنے قاتل کے خلاف گواہی دے گی، مگر کیسے؟ جان کر آپ کو بھی بے حد حیرت ہوگی

تاریخ میں پہلی مرتبہ قتل ہونے والی نوجوان لڑکی عدالت میں اپنے قاتل کے خلاف ...

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) کچھ عرصہ قبل امریکہ میں ایک لڑکی کو اس کے سابق بوائے فرینڈ نے بے رحمی کے ساتھ زندہ جلا کر مارڈالا تھا۔ اب اس کے قتل کے مقدمے میں ایک ایسا گواہ عدالت میں پیش ہونے جا رہا ہے کہ کوئی سوچ بھی نہ سکتا تھا۔ میل آن لائن کے مطابق یہ گواہ کوئی اور نہیں بلکہ خود مقتولہ لڑکی ہے۔ امریکی ریاست اوہائیو میں جوڈی میلینووسکی نامی اس لڑکی کو اگست 2017ءمیں اس کے سابق بوائے فرینڈ مائیکل سلیگر نے مٹی کا تیل چھڑک کر آگ لگا دی تھی جو بعدازاں ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسی۔

رپورٹ کے مطابق مرنے سے پہلے جوڈی کا آخری ویڈیو بیان ریکارڈ کیا گیا تھا جسے اب گواہی کے طور پر عدالت میں پیش کیا جا رہا ہے۔ اس ویڈیو ٹیپ کو کمرہ عدالت میں سکرین پر چلایا جائے گا اور اس ویڈیو کو باقاعدہ گواہ کی حیثیت حاصل ہو گی۔ رپورٹ کے مطابق ملزم کے وکلاءنے قانونی جواز تراش کر اس ویڈیو کو بطور ثبوت عدالت میں پیش کیے جانے سے روکنے کی استدعا کی تھی لیکن عدالت نے مقتولہ کے وکیل کو ویڈیو بطورگواہی پیش کرنے کی اجازت دے دی۔ رپورٹ کے مطابق اس مختصر سی ویڈیو میں مقتولہ نے کہا تھا کہ ”میں سوچ بھی نہیں سکتی تھی کہ کوئی انسان ایسا شیطانی کام کر سکتا ہے۔ اس نے مجھ پر تیل چھڑک کر آگ لگائی اور دور کھڑا تماشا دیکھتا رہا۔ خدایا پلیز، پلیز میری مدد کر۔“واضح رہے کہ ملزم کو قبل ازیں بھی 11سال قید کی سزا سنائی جا چکی ہے اور وہ جیل میں ہے تاہم لڑکی کو جلا کر قتل کرنے کا انکشاف سامنے آنے پر مزید سنگین الزامات کے تحت اس پر دوبارہ مقدمہ چلایا جا رہا ہے جس میں اسے ممکنہ طور پر عمر قید کی سزا ہو سکتی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...