عالمی برادری جنوبی ایشیا میں بھارت کو جنگی ماحول پیدا کرنے سے روکے، گورنر ز کا نفرنس

عالمی برادری جنوبی ایشیا میں بھارت کو جنگی ماحول پیدا کرنے سے روکے، گورنر ز ...

  

مظفرآباد (این این آئی)صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی کی طرف سے منعقدہ گورنرز کانفرنس جس میں چاروں صوبوں کے گورنرز، آزاد جموں و کشمیر کے صدر سردار مسعود خان اور گورنر گلگت بلتستان نے ویڈیو لنک کے ذریعے شرکت کی بھارتی فوج کی لائن آف کنٹرول پر فائرنگ، مقبوضہ کشمیر میں شہری آبادیوں کے اندر آرٹلری گنوں کی تنصیب مقبوضہ ریاست میں کرونا وائرس کی آڑ میں شہری آزادیوں پر مزید پابندیوں اور متنازعہ ڈومیسائل قانون کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری سے اپیل کی کہ وہ بھارت کے جنگی جنون کا سخت نوٹس لیتے ہوئے کشمیر کے حوالے سے بھارت کو غیر قانونی اقدامات سے باز رکھے۔ گورنرز کانفرنس نے بھارتی فوج کی طرف سے وادی نیلم، چڑی کوٹ، نکیال سیکٹر کے علاوہ ورکنگ باونڈری کے شکر گڑھ کے علاقے میں بلا اشتعال اور بلا جواز بھارتی آرٹلری اور مارٹر گنوں سے گولہ باری کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی فوج کی جارحیت سے کرونا کے خلاف جاری کوششیں متاثر ہو رہی ہیں۔ کانفرنس میں بھارتی فوج کی طرف سے آزاد کشمیر کی شہری آبادی پر بلا اشتعال گولہ باری کوبھارت کی طرف سے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال سے دنیا کی توجہ ہٹانے کا کوشش قرار دیا۔ گورنرز کانفرنس نے بھارتی فوج کی طرف لائن آف کنٹرول کے نزدیک کپواڑہ ضلع میں شہری آبادی کے اندر آرٹلری گنوں کی تنصیب کی شدید مذمت کرتے ہوئے بھارت کے اس اقدام کو نہتے اور بے گناہ شہریوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کرنے کا حربہ قرار دیا ہے۔ گورنر کانفرنس نے لائن آف کنٹرول پر بھارت کی اشتعال انگیز کاررائیوں کو خطہ میں امن و سلامتی کے خلاف سنگین خطرہ قرار دیتے ہوئے عالمی برادری سے اپیل کی کہ وہ بھارت کو ایک ایسے وقت میں جنگی ماحول پیدا کرنے سے باز رکھے جب کشمیر کے دونوں حصوں کے عوام کرونا وائرس کے خلاف جنگ میں مصروف ہیں۔ گورنر کانفرنس نے بھارتی حکومت کی طرف سے مقبوضہ جموں و کشمیر میں متنازعہ ڈومیسائل قانون کے ذریعے مقبوضہ کشمیر میں آبادی کے تناسب میں تبدیلی کی کوششوں اور کرونا وائرس کی آڑ میں مذید طر ح طرح کی پابندیاں عائد کر کے کشمیریوں کی شہر ی آزادیوں اور اُن کے بنیادی حقوق چھیننے کی کوشش قرار دیتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ جموں و کشمیر کے عوام نے بھارت کے ان تمام اقدامات کو مسترد کر دیا ہے۔ گورنر کانفرنس نے اس بات پر بھی شدید تشویش کا اظہار کیا کہ بھارت نے انسانی حقوق کی 6 عالمی تنظیموں کی طرف سے مقبوضہ کشمیر اور بھارت کی جیلوں میں قید ہزاروں شہریوں کی فوری رہائی کے مطالبہ پر کوئی توجہ نہیں دی جس سے جیلوں میں قید سیاسی رہنماؤں اور سیاسی کارکنوں کی زندگی کو شدید خطرات لاحق ہو گئے ہیں۔ کانفرنس نے انسانی حقوق کی تنظیموں اور عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ بھارتی حکومت پر مذید دباو بڑھا کر بھارت کی جیلوں میں قید ہزاروں کشمیریوں کی رہائی کو یقینی بنائیں۔ گورنر کانفرنس سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے آزاد جموں و کشمیر کے صدر سردار مسعود خان نے بتایا کہ آزاد کشمیر حکومت کرونا وائرس کی وبا کو پھیلنے سے روکنے کے لیے ہمہ وقت مصروف ہے لیکن بھارتی فوج کی طرف سے سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے آزاد کشمیر کے شہریوں پر بلا جواز اور بلا اشتعال فائرنگ سے حکومت کی کرونا کے خلاف جاری کوششیں متاثر ہو رہی ہیں۔ اُنہوں نے گورنر کانفرنس کے شرکاء کو بتایا کہ حکومت کی بروقت کوششوں سے اب تک صورتحال مکمل طور پر کنٹرول میں ہے۔ اب تک آزاد ریاست میں کرونا سے متاثرہ مریضوں میں سے اکثریت کی حالت خطرے سے باہر اور بہت سے صحت یاب ہو رہے ہیں۔

گورنرز کانفرنس

کراچی (این این آئی)صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی زیر صدارت صوبائی گورنرز کا ویڈیو لنک کے ذریعہ اجلاس منعقد ہوا جس میں صدر آزاد کشمیر، سندھ، پنجاب، خیبر پختونخوا، بلوچستان اور گلگت بلتستان کے گورنرز اور وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا بھی موجود تھے۔ اجلاس میں ملک میں کرونا وائرس کی صورتحال،اس سے بچاؤ کی احتیاطی تدابیر،علاج اور دیکھ بھال کیلئے مختلف صوبوں میں آئسولیشن وارڈز، ٹیسٹ کٹس کی دستیابی اس ضمن میں وزارت صحت اور این ڈی ایم اے کی کاوشوں اور دیگر متعلقہ امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ گورنر سندھ عمران اسماعیل نے اجلاس کو صوبہ میں اس ضمن میں کئے جانے والے اقدامات سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ سندھ میں مریضوں کو فیلڈ آئسولیشن سینٹر کراچی اور قرنطینہ سینٹر سکھر کی صورت میں علاج اور دیکھ بھال کی سہولیات موجود ہیں۔ گورنر سندھ نے کہا کہ لاک ڈاؤن کے باعث یومیہ اجرت پر کام کرنے والے زیادہ مشکلات کا شکار ہیں اس لئے ایسے افراد کو راشن پہنچانے کے لئے ہر ممکن اقدامات کر رہے ہیں تاکہ اس مشکل وقت میں ان کی مدد کی جاسکے۔

صدر مملکت/اجلاس

مزید :

صفحہ آخر -