افغان سیکورٹی فورسز کیساتھ جھڑپ، 8طالبان ہلاک، 11زخمی، بم دھماکے میں قبائلی سردار ماراگیا

        افغان سیکورٹی فورسز کیساتھ جھڑپ، 8طالبان ہلاک، 11زخمی، بم دھماکے میں ...

  

قلعہ نو،جلال آباد(شِنہوا)افغانستان میں سیکورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپ میں 8طالبان ہلاک اور 11زخمی ہوگئے جبکہ سڑک کنارے نصب بم کے دھماکے میں قبائلی سردار مارا گیا۔افغانستان کے مغربی صوبے بادغیس میں سیکیورٹی فورسز کے ساتھ ایک خونرریز جھڑپ میں کم سے کم آٹھ طالبان عسکریت پسند ہلاک اور11دیگر زخمی ہوگئے، پیر کو فوج سے جاری کردہ ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ یہ جھڑپ اس وقت شر و ع ہوئی جب طالبان جنگجووں نے قادس ضلع کو صوبائی دارالحکومت قلعہ نو کو ملانے والے اہم شاہراہ کو بند کرنے کے لیے سکیورٹی فورسز کی ایک چیک پوسٹ پر اتوار کی رات حملہ کیاتاہم بشمول فوج اور پولیس سکیورٹی فورسز نے جوابی کارروائی کی جس سے عسکریت پسند آٹھ لاشیں چھوڑتے ہو ئے پسپا ہوگئے۔بیان کے مطابق چند گھنٹے جاری رہنے والی اس جھڑپ میں مزید گیارہ عسکریت پسند زخمی بھی ہوئے۔ ادھر افغانستان کے مشرقی صوبہ ننگرہارکے ضلع لالپور میں پیر کوایک گاڑی سڑک کنارے نصب بم سے ٹکرانے سے ایک قبائلی رہنما جاں بحق اوردیگر دو زخمی ہوگئے،یہ بات صوبائی حکومت کے ترجمان عطا اللہ خوگیانی نے بتائی۔خوگیانی کے مطابق لال پور ضلع کے علاقے شاتوکئی میں پیر کو ایک سویلین گاڑی عسکریت پسندوں کی جانب سے نصب کردہ بارودی سرنگ سے ٹکراگئی جس سے ایک قبائلی سردار ہلاک اور دو دیگر زخمی ہوگئے۔مزید تفصیلات فراہم کیے بغیر خوگیانی نے بتایاکہ اس ہلاکت خیز واقعے کی تحقیقات کا آغاز کردیا گیا تھا۔تاہم نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر ایک اہلکار نے بتایا کہ ہلاک ہونے والے افراد حکومت کے حامی قبائلی عمائدین تھے۔

افغانستان جھڑپ

مزید :

صفحہ آخر -