کرونا پر ایک بیانیہ، لاک ڈاؤ ن میں 2ہفتے توسیع ضروری: مراد علی شاہ

  کرونا پر ایک بیانیہ، لاک ڈاؤ ن میں 2ہفتے توسیع ضروری: مراد علی شاہ

  

کراچی (سٹاف رپورٹر، نیوز ایجنسیاں) وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ کرونا کے حوالے سے پورے ملک کا بیانیہ ایک ہونا چاہئے، کیا ہم انتظار کر رہے ہیں کہ لاشیں دیکھیں اور پھر متحد ہوں،پیر کو میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ وزیراعلی سندھ نے کہاکہ میں وزیر اعظم سے درخواست کرتا ہوں کہ وہ اس معاملے پر ایکشن لیں اور ہر صوبہ الگ الگ ایکشن لے گا تو صورتحال قابو میں نہیں رہے گی، کابینہ ممبران اور ڈاکٹرز نے دو ہفتے مزید سخت لاک ڈاؤن کے نفاذ کی تجویزدی ہے۔مراد علی شاہ نے کہا کہ اگر پہلے ہی دن موثر لاک ڈاؤن کردیتے تو اچھا ہوتا اور صورتحال اس قدر خراب نہ ہوتی، وفاقی حکومت نے نقد رقوم تقسیم کرنے کے لیے لوگوں کو جمع کرنا ہے تو لاک ڈاؤن ختم کردے، لوگ کرونا وائرس کی سنگینی کو سمجھ نہیں رہے ہیں، مجھے جتنی گالیاں دینی ہیں دے لیں مگر متحد ہو کر ایک سمت میں چلیں۔ وفاق نے اپنا پروگرام بنالیا، اس میں سماجی فاصلے کا خیال نہیں ہو رہا، اس طرح کے لاک ڈاؤن کا کیا فائدہ ہوگا؟کورونا وائرس بین الاقوامی وبا ہے، وائرس سے متعلق کوئی بھی غلطی کریگا توپوری دنیا متاثر ہوگی، اس وائرس کو بالکل بھی غیر سنجیدہ نہ لیا جائے،ابھی تک سندھ حکومت ڈھائی لاکھ راشن بیگز تقسیم کرچکی ہے، ہم راشن دیتے ہوئے تصاویر نہیں بناتے۔ صوبے میں کرونا سے 31 لوگوں کی اموات ہو چکی ہے، 317 اافراد ابھی ہسپتالوں میں زیر علاج ہیں۔ انہوں نے کہاکہ میں فیصلہ کروں گا اور آپ اس پر عمل نہیں کریں گے تو نقصان میرا بھی ہو گا۔کرونا وائرس بین الاقوامی وبا ہے، اس وائرس سے متعلق کوئی بھی غلطی کرے گا تو اس سے پوری دنیا متاثر ہوگی، اس وائرس کو بالکل بھی غیر سنجیدہ نہ لیا جائے۔وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا کہ ہم نے سوچے سمجھے بغیر لاک ڈاؤن کیا۔ ہم سے غلطیاں ہوئی ہیں تاہم لاک ڈاؤن بہت ضروری تھا، مارچ میں وزیر اعظم کو خط لکھ کر صوبے کی ضروریات سے متعلق آگاہ کر دیا تھا، ہم نے یہ بھی وفاق کو بتادیا تھا کہ لاک ڈاؤن 100فیصد موثر نہیں ہو رہا۔معیشت کو دھچکا لگا ہے لیکن معیشت پھر سنبھل جائے گی، لیکن انسان تو دوبارہ واپس نہیں آ سکتے۔لوگوں کو جمع کر کے راشن نہیں دے رہے، صبح 4 سے 7 بجے تک لوگوں کے گھروں میں راشن پہنچا رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ متحدہ قومی موومنٹ اور پیپلز پارٹی کے ارکان اسمبلی نے اپنی ساری تنخواہیں کرونا فنڈ میں دی ہیں۔

مراد علی شاہ

مزید :

صفحہ آخر -