مہمند،تحصیل پنڈیالئی میں زمین تنازعہ پر لڑائی میں ایک شخص زخمی

مہمند،تحصیل پنڈیالئی میں زمین تنازعہ پر لڑائی میں ایک شخص زخمی

  

مہمند(نمائندہ پاکستان)مہمند،تحصیل پنڈیالئی میں زمین تنازعہ پر لڑائی میں ایک شخص زخمی۔حکومت انصاف دلائے۔پولیس فورس کے اہلکار اپنے بھائیوں سے ملکر مجھے شدید زدکوب کیا۔متاثرہ شخص کی فریاد۔تفصیلات کے مطابق قبائلی ضلع مہمند کے تحصیل پنڈیالئی گاؤں ملیانو ں کلے کے مقامی رہائشی حزب اللہ ولد مولانا روح اللہ نے صحافیوں کو جھگڑے اور مخالف فریق سے ان پر کئے گئے ظلم کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ کافی عرصے سے ہمارا ابراہیم اور عمران ولد امان اللہ کے ساتھ زمین کا تنازعہ چل رہا تھا۔ جس میں کئی دفعہ پہلے بھی ہاتھا پائی ہوچکی ہے۔جسکے بعد جرگے نے ہمارے مابین فیصلہ کیا لیکن مخالف فریق نے فیصلہ ماننے سے انکار کیا۔ اور زور زبردستی پر اتر آئیں۔گزشتہ رات کو میں ٹیوب ویل میں کام کر رہا تھا کہ ابراہیم اور عمران ولد امان اللہ نے آکر مجھے ڈنڈوں سے مارنا شروع کیا اور میرے ساتھ چھوٹے بچوں کو بھی شدید زدو کوب کیا۔میرے سر اور ہاتھ میں شدید چوٹیں آئی ہیں۔ اور پتھر مار کر میرا پیر بھی شدید زخمی کیا۔زخمی حزب اللہ نے الزام لگایا کہ مخالف فریق میں شامل عمران نامی شخص مہمند پولیس فورس کا اہلکار ہے لیکن وہ ڈیوٹی نہیں کرتا اور گھر بیٹھ کر تنخواہ لے رہا ہے،یہ شخص اپنے عہدے کا ناجائز استعمال کرکے ہمیں ڈرانے دھمکانے کی باربار کوشش کر رہا ہے۔اور خود کو قانون سے بالاتر سمجھتا ہے۔انہوں نے اس مسئلے کے بارے میں 9 اپریل کو تھانہ یکہ غنڈ میں ایک درخواست جمع کروائی تھی جس پر فوری طور پر کاروائی ہوئی۔ اور ہمیں پیر کے دن تھانہ یکہ غنڈ میں پیش ہونے کا حکم جاری کیا لیکن مخالف فریق نے پولیس کے احکامات کو بھی نظر انداز کر کے زور زبردستی پرتلے ہوئے ہیں۔پولیس اور ضلعی انتظامیہ سے ہماری درخواست ہے کہ ہمیں فوری طور پر انصاف فراہم کیا جائے اور ہمارے مخالف فریق کے خلاف فوری طور پرقانونی کارروائی کریں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -