احساس کفالت پروگرام، غیر قانونی کٹوتیوں، نوسر بازوں کیخلاف بڑے کریک ڈاؤن کا حکم

احساس کفالت پروگرام، غیر قانونی کٹوتیوں، نوسر بازوں کیخلاف بڑے کریک ڈاؤن کا ...

  

راجن پور‘ شادن لُنڈ‘ ٹبہ سلطان پور‘ میاں چنوں (ڈسٹرکٹ رپورٹر‘ نمائندہ پاکستان) ڈپٹی کمشنر راجن پور ذوالفقار علی کا ضلع بھر میں احساس کفالت پروگرام کے تحت امدادی رقم کی ادائیگیوں میں غیر قانونی کٹوتی کرنے والے عناصر کے خلاف کریک ڈاون کا حکم دیدیا ہے تفصیلات کے مطابق احساس کفالت پروگرام کے تحت امدادی رقم کی تقسیم میں غیر قانونی کٹوتی کی اطلاعات ملنے پر ڈپٹی کمشنر ذوالفقار علی نے ضلع بھر (بقیہ نمبر52صفحہ6پر)

میں احساس کفالت پروگرام کے تحت امدادی رقم کی ادائیگیوں میں غیر قانونی کٹوتی کرنے والے عناصر کے خلاف کریک ڈاون اور تمام اسسٹنٹ کمشنرز کو فوری ایکشن لینے کی ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔ ڈپٹی کمشنر ذوالفقار علی نے خود سون میانی کا دورہ کر کے اسسٹنٹ کمشنر روجھان عثمان غنی کے ساتھ غیر قانونی کٹوتی کرنے والے عناصر کے خلاف ایکشن لیا اور 2 افراد ضمیر حسین ولد جیون اور ریاض گل ولد خان محمد کے خلاف مقدمہ درج کرا دیا۔اسی طرح راجن پور کے نواحی علاقہ محمد پور دیوان سے بھی غیر قانونی کٹوتی کرنے والے 4افراد سرفراز ولد صادق،محمد شعیب ولد عبدالمجید،محمد زوہیب ولد عبدالمجید اورمحمد سیف ولد رشید احمد کو پولیس نے اپنی تحویل میں لے لیا ہے۔ان سے دو عدد ڈیوائس اور نقد رقم 5لاکھ روپے بھی برآمد کر لی گئی ہے۔ ڈپٹی کمشنر نے تمام اسسٹنٹ کمشنرز کو ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ غیر قانونی کٹوتی کرنے والے عناصر کو کسی قسم کی رعایت نہ دی جائے۔ نہ صرف ان عناصر کو فوری طور پر پابند سلاسل کیا جائے بلکہ کاٹی گئی رقم بھی متاثرین کو واپس کی جائے۔ جبکہ احساس پروگرام کی قسط چلانے والے ریٹیلر انتظامیہ کے خوف سے موقع پر کٹوتی کرنے کی بجائے کیمپوں کے باہر اپنے ایجنٹ بٹھا دیے جو 500 روپے سے لے کر 1000روپے وصول کرکے خواتین کو مخصوص ٹوکن جاری کر دیتے ہیں جس کی وجہ سے وہ خاتون جونہی اندر جا کر ٹوکن دکھاتی ہے اسے بغیر انتظار کئے رقم مل جاتی ہے جبکہ سینکڑوں خواتین کو نیٹ ورک خرابی کا بہانہ بنا کر دن بھر ذلیل وخوار کیا جاتا ہے اس حوالہ سے متعدد خواتین نے موقعہ پر موجود ضلعی انتظامیہ سے شکایت کی مگر شنوائی نہ ہوئی جس سے ریٹیلروں کی لوٹ مار جاری ہے۔ جہانیاں کے ایک ریسٹورنٹ اینڈ میرج ہال کے مالک اور ملازمین اپنے دیگر ساتھیوں کے ساتھ ملکر کورونا وائرس کی وجہ سے لاک ڈاؤن کے باعث بے روز گار ہونے والے گھرانوں کی شریف خواتین کو امدادی راشن اور رقم دینے کے جھانسہ دے کر اُن کے موبائل فون اکھٹے کرنے کے بعد انہیں کال کر کے زبردستی دوستی کر نے پر مجبور کرنے لگے دوستی نہ کر نے کی صورت میں سنگین نتائج کی دھمکیاں دے کر اُن کی مجبوریوں کا ناجائزہ فائدہ اُٹھا نے لگے متاثرہ خواتین نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ریسٹورنٹ اینڈ میرج ہال کا مالک اور ملازمین رات کے وقت ہمارے گھروں میں راشن فراہم کرنے کے لئے آتے اور گھروں میں مردوں کی غیر موجودگی میں بداخلاقی کر کے وڈیو بنا لیتے ا بلیک میل کرتے ہیں پولیس تھا نہ جہانیا ں میں کاروائی کے لئے درخواست بھی دی ہے لیکن کوئی سنوائی نہیں ہوئی متاثرہ خواتین نے شدید احتجاج کرتے ہوئے کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔جنڈیالی بنگلہ میں احساس کفالت پروگرام کا دوسرا ریٹیلرز بھی خاتون کو کم پیسے دیتے ہوا پکڑا گیا ظہیر عباس نے اپنے ہی گاوں کی خاتون کو ایک دن پہلے بارہ ہزار کی بجائے آٹھ ہزار آٹھ سو روپے دیئے خاتون کی شکایت پر BISP کے انچارچ نے ریکارڈ چیک کرتے ہوئے ریٹیلرز کو گرفتار کروا دیا جنڈیالی چوکی پولیس نے ظہیر نامی ریٹیلرز کو گرفتار کر کہ کاروائی شروع کردی۔

حکم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -