چینی بحران پر تحقیقات‘ جہانگیر ترین گروپ کی طرف سے کمیشن کو اعداد وشمار فراہم

  چینی بحران پر تحقیقات‘ جہانگیر ترین گروپ کی طرف سے کمیشن کو اعداد وشمار ...

  

حاصل پور(نمائندہ خصوصی) جے ڈی ڈبلیو شوگر ملز کے چیف ایگزیکٹو تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین کے گروپ نے 2018ء کے مقابلہ میں 2019ء کے سال میں ٹیکسوں اور ڈیوٹیوں کی مد میں 43فیصد زیادہ ادا کئے ہیں (بقیہ نمبر50صفحہ6پر)

۔ 2018ء میں ان کے گروپ نے 3ارب 65کروڑ 90لاکھ ادا کئے تھے جو 2019ء میں بڑھ کر 6ارب 9کروڑ 80 لاکھ روپے تک پہنچ گئے۔ذمہ دار ذرائع کے مطابق یہ اعداد و شمار کمیشن ا?ف انکوائری جو کہ چینی کی قیمت میں اضافہ اور دیگر امور پرتحقیقاتی رپورٹ تیار کر رہا ہے کے ارکان کو فراہم کئے گئے۔ کمیشن کے ارکان کو متذکرہ جے ڈی ڈبلیو کی تینوں ملوں کی چینی کی تفصیلی پیداوار اور گذشتہ پانچ سالوں کا ریکارڈ بھی فراہم کیا گیا ہے جس کے مطابق 2019ء کے مالی سال میں گزشتہ سالوں کے مقابلے میں گنے سے چینی بنانے کی شرح سب سے زیادہ رہی تاہم 2018ئکے مقابلہ میں پیداوار کم رہی۔ترین کیقریبی ذرائع کے مطابق اس امر کا اظہار بھی کیا گیا کہ گزشتہ سالوں کی نسبت اس سال2019 - 2020 کے دوران گنے کے کاشتکار زیادہ خوش ہیں کیونکہ گزشتہ ساالوں کے دوران حکومتوں کی طرف سے نوٹیفائیڈ ہونیوالی سپورٹ پرائس کے مقابلہ میں انہیں فی من گنے کی قیمت کم ملتی رہی ہیلیکن اس سال صورتحال اس کے بر عکس رہی جس سے ا?ئندہ سالوں کے دوران گنے کی پیداوار کو کاٹن، چاول، گندم اور مکئی کی فصلوں کاسخت مقابلہ درپیش ہو۔

فراہم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -