کرونا کیخلاف جنگ میں پاکستانی سائنسدانوں کی اہم کامیابی کا دعویٰ

کرونا کیخلاف جنگ میں پاکستانی سائنسدانوں کی اہم کامیابی کا دعویٰ

  

کراچی(این این آئی)کو رونا کے خلاف جنگ میں پاکستانی سائنسدانوں اہم کامیابی حاصل کرنے کا دعوی کیا ہے۔ ڈاؤیونیورسٹی سے جاری اعلامیہ میں بتایا گیا ہے کہ ڈاؤ یونیورسٹی کی ریسرچ ٹیم نے کورونا کے صحتیاب مریضوں کے خون سے حاصل شدہ اینٹی باڈیز سے انٹرا وینیس امیونو گلوبیولن(آئی وی آئی جی)تیار کرلی جس کے ذریعے کورونا متاثرین کا علاج کیا جاسکے گا۔وائس چانسلر پروفیسر محمد سعید قریشی نے کووڈ 19 کے خلاف جنگ میں اسے ایک انتہائی اہم پیش رفت قرار دیا ہے۔ڈا کالج آف بائیو ٹیکنا لوجی کے پرنسپل پروفیسر شوکت علی کی سربراہی میں ریسرچ ٹیم نے دنیا میں پہلی مرتبہ کورونا کے علاج کیلئے امیونوگلوبیولن کاموثر طریقہ اختیار کرنے کی تیاری مکمل کرلی ہے۔امریکی ادارے ایف ڈی اے سے منظورشد ہ یہ طریقہ علاج محفوظ، لورسک اور کورونا کے خلاف انتہائی موثر ہے۔اس طریقہ علاج میں کورونا سے صحت یاب مریض کے خون میں نمو پانے والے اینٹی باڈیز کو علیحدہ کرنے کے بعد شفاف کرکے امیونو گلوبیولن تیار کی جاتی ہے یہ طریقہ علاج پلازما تھراپی سے بالکل ہی مختلف ہے۔

دوائی

مزید :

صفحہ اول -